چیف جسٹس نے نیب کو ایازخان نیازی کی گرفتاری سے روک دیا
The news is by your side.

Advertisement

چیف جسٹس ثاقب نثار نے نیب کو ایازخان نیازی کی گرفتاری سے روک دیا

اسلام آباد : این آئی سی ایل اسکینڈل کیس میں چیف جسٹس ثاقب نثار نے نیب کو ایاز خان نیازی کی گرفتاری سے روک دیا اور کہا جو پاکستان میں ہوتا ہے اسے گرفتار کرلیا جاتا ہے اور جسے پکڑنا تھا وہ تو ملک سے باہر بھاگ گیا۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ میں چیف جسٹس کی سربراہی میں این آئی سی ایل اسکینڈل کیس کی سماعت ہوئی ، دوران سماعت چیف جسٹس ثاقب نثار نے نے نیب کو ایاز خان نیازی کی گرفتاری سے روک دیا اور کہا جسے پکڑنا تھا وہ تو ملک سے باہر بھاگ گیا۔

چیف جسٹس نے ریمارکس میں کہا پتہ ہے کیسے سیاسی طور پر لوگوں کو باہر بھیج دیا جاتا ہے، جو پاکستان میں ہوتا ہے اسے گرفتار کرلیا جاتا ہے۔

جسٹس ثاقب نثار کا کہنا تھا کہ دوران تحقیقات نیب لوگوں کو کیوں اٹھا کرلے جاتی ہے، نیب تحقیقات کے بہانے کیوں لوگوں کو لٹکا کر رکھتی ہے، جن کو پکڑنا ہوتا ہے آپ پکڑتے نہیں۔

چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے معلوم ہے نیب کیسے لوگوں کو باہر جانے کے راستےبتاتا ہے، ہمارےپاس ساری معلومات ہیں، جو شخص آپ کی قید میں آجاتا ہے، اسے نیب رگڑ دیتا ہے۔

نیب کی جانب سےبتایاگیا ایازنیازی کےخلاف دو انکوائریاں چل رہی ہیں۔

عدالت نے ہدایت کی کہ ایاز خان نیازی کے خلاف کوئی اور کیس ہے تو گرفتاری سے پہلے وارنٹ جاری کئے جائیں گے، ایاز خان نیازی ان وارنٹس کے خلاف دس دن میں ضمانت کرواسکیں گے۔

بعد ازاں کیس کی سماعت غیر معینہ مدت تک کے لیے ملتوی کر دی گئی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں