The news is by your side.

Advertisement

ایگزیکٹ اسکینڈل کی وجہ سے سر شرم سےجھک گئے،چیف جسٹس

اسلام آباد : چیف جسٹس ثاقب نثار نے ایگزیکٹ جعلی ڈگری کیس کانوٹس لیتے ہوئے ڈی جی ایف آئی اے سے 10روزمیں رپورٹ طلب کرلی ہے اور کہا کہایگزیکٹ اسکینڈل کی وجہ سے سر شرم سے جھک گئے۔

تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے ایگزیکٹ جعلی ڈگری کیس کا ازخود نوٹس لے لیا اور ریمارکس میں کہا کہ پاکستان کوبدنام کرنے والا کوئی بچ کر نہیں جائے گا، ایگزیکٹ اسکینڈل کی وجہ سےسرشرم سےجھک گئے اور پاکستان کی عالمی سطح پر بدنامی ہوئی۔

چیف جسٹس نے اپنے ریمارکس میں کہا کہ ڈی جی ایف آئی اےمفصل رپورٹ پیش کریں، جعلی ڈگری کی خبریں درست ہیں تواس کاتدارک ہوناچاہیے، جعلی ڈگری پروپیگنڈاہےتوحکومتی سطح پرنوٹس لیناچاہیے۔

چیف جسٹس ثاقب نثار نے ڈی جی ایف آئی اے سے 10 روز میں رپورٹ طلب کر لی اور ایگزیکٹ سکینڈل سماعت کیلئے مقرر کرنے کا حکم دے دیا۔


مزید پڑھیں :  جعلی ڈگریوں کے دھندے سے ایگزیکٹ نے کروڑوں ڈالرز کمائے، نیویارک ٹائمز


یادرہے کہ سال 2015 میں نیویارک ٹائمز نے ایگزیکٹ کا ملٹی ملین ڈالر اسکینڈل پھوڑا، جس سے پاکستان میں تہلکہ مچ گیا تھا، رپورٹ میں انکشاف کیا گیا تھا کہ پاکستان کی ایک سافٹ ویئر کمپنی ”ایکزیکٹ“ نے جعلی ڈگریوں سے کروڑوں ڈالرز کمائے ہیں ۔

رپورٹ منظرعام پر آنے کے بعد حکومت کو مجبوراً ایگزیکٹ کے دفاتر پر چھاپہ مارنا پڑا تھا جبکہ ایگزیکٹ سے جعلی ڈگری حاصل کرنے والوں میں بعض اہم بین الاقوامی شخصیات بھی شامل ہیں۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی وال پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں