The news is by your side.

Advertisement

بھارتی حکومت کے 100 سمارٹ سٹی بنانے کے دعوے جھوٹ نکلے

نئی دہلی : سنہ 2015 میں بھارتی حکومت کے پانچ برس میں 100 اسمارٹ شہر تعمیر کرنے کے وعدے جھٹ نکلے۔

تفصیلات کے مطابق پانچ سال گزرنے کے بعد بھی اسمارٹ شہروں کی تعمیر پر کوئی پیش رفت نہیں ہوسکی بلکہ حکومت کی جانب سے اس منصوبے کی تکمیل کی تاریخ کو ہی بڑھا دیا گیا ہے۔

بھارتی خبر رساں ذرائع کا کہنا ہے کہ حکومت کی جانب سے کن کن شہروں کو سمارٹ بنایا جائے گا اس کا فیصلہ ایک ہی وقت پر نہیں کیا گیا تھا۔

بھارتی میڈیا کا کہنا ہے کہ مودی سرکار نے سمارٹ سٹی فنڈ کے لیے مختص رقم کا صرف چھوٹا سا حصہ ہی اب تک خرچ کیا گیا ہے، سنہ 2014 میں لوک سبھا انتخابات کی مہم کے دوران سمارٹ سٹی کی تعمیر کا اعلان کیا گیا تھا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا ہے کہ اسمارٹ سٹی کی تعمیر کے اعلان کے ایک سال بعد 2015 میں سمارٹ سٹی اسکیم لانچ کی گئی تھی۔

حکومت نے پارلیمنٹ میں بتایا کہ اکتوبر 2017 کے مقابلے میں اسمارٹ سٹی مشن کے تحت مکمل ہونے والے منصوبوں میں 479 فیصد اضافہ ہوا ہے۔

ہاؤسنگ اور شہری معاملات کے نائب وزیر پردیپ سنگھ پوری نے بتایا کہ اس منصوبے کے تحت 13 مشترکہ مراکز پہلے سے ہی کام کر رہے ہیں۔

پردیپ سنگھ پوری کا کہنا تھا کہ اگر ہم نے دسمبر سنہ 2019 تک 100 منصوبوں میں 50 سے زائد منصوبے بھی مکمل کر لیے تو میرے مطابق یہ دنیا میں سب سے تیزی سے عمل میں آنے والے منصوبوں میں سے ایک ہوگا۔

دوسری جانب حزب اختلاف کی جماعتوں نے حکومت کی اسمارٹ سٹی اسکیم کو انتخابی مہم کا حربہ قرار دیا اور سخت تنقید کرتے ہوئے کہا کہ اس کے اثرات زمین پر نظر نہیں آتے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں