گورنربلوچستان سے 20 رکنی ایرانی وفد کی ملاقات، پاکستان ایران تجارتی سرگرمیوں پر گفتگو
The news is by your side.

Advertisement

گورنربلوچستان سے 20 رکنی ایرانی وفد کی ملاقات، پاکستان ایران تجارتی سرگرمیوں پر گفتگو

کوئٹہ: گورنربلوچستان امان اللہ خان یاسین زئی سے 20 رکنی ایرانی وفد نے ملاقات کی اس دوران پاکستان ایران تجارتی سرگرمیوں پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق امان اللہ خان یاسین زئی سے 20 رکنی وفد سے ملاقات میں پاکستان ایران تجارتی سرگرمیوں سمیت مختلف امور پر گفتگو کی گئی۔

اس موقع پر گورنر بلوچستان کا کہنا تھا کہ پاکستان اور ایران خطے میں رونما تبدیلیوں سے بھرپور استفاده کریں، دونوں ملکوں کے درمیان مضبوط تعلقات چاہتے ہیں۔

ایران بلوچستان کودوہزارمیگاواٹ بجلی فراہم کرے گا

ان کا مزید کہنا تھا کہ سرحدی تجارت فعال ہونے سے اسمگلنگ اور دشت گردی کا خاتمہ ہوگا، دونوں ملکوں کے درمیان تعلقات مزید مضبوط ہونے سے خطے میں مثبت اثرات مرتب ہوں گے۔

خیال رہے کہ 2015 میں سابق وزیراعلیٰ بلوچستان عبدالمالک نے ایرانی کاروباری حضرات کو پاکستان میں کان کنی، انڈسٹریز اور فشریز میں سرمایہ کاری کرنے کی دعوت دی تھی۔

انہوں نے کہا تھا کہ ایرانی حکومت کیلئے پاکستان سے تعلقات بہت اہمیت کے حامل ہیں۔

واضح رہے کہ مئی 2015 میں ایران نے صوبہ بلوچستان کے لیے دو ہزار میگاواٹ بجلی فراہم کرنے پر رضامندی ظاہر کی تھی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں