The news is by your side.

Advertisement

پاک اٖفغان بارڈر کو 24گھنٹے کھولے رکھیں گے، وزیراعلیٰ کے پی محمود خان

پشاور : وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا محمود خان نے کہا پاک اٖفغان بارڈر کو 24گھنٹے کھولے رکھیں گے، بارڈرکھلے رہنے سے ٹرانزٹ بڑھےگی ، طور خم بارڈر کو جدید سہولتوں سےآراستہ کررہے ہیں، کوشش ہے بارڈر کے دونوں طرف مشکلات کاخاتمہ ہو۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا نے چیف سیکریٹری اور دیگرحکام کیساتھ طورخم بارڈر کا دورہ کیا، وزیراعظم کے مشیرارباب شہزاد بھی دورے میں شریک تھے، امیگریشن اورکسٹم حکام نے حکام کو مسائل و مشکلات پر بریفنگ دی۔

وزیراعلی خیبر پختونخواہ کا کہنا تھا پاک اٖفغان بارڈرکو24 گھنٹے کھولے رکھیں گے، بارڈرکھلے رہنے سے ٹرانزٹ بڑھےگی، مقصد ٹریڈ کو بڑھانا ہے،3ماہ میں پہلےمیں یہاں کا دورہ کیا تھا۔

بارڈرکھلے رکھنے کا مقصد ٹریڈ کو بڑھانا ہے

محمودخان نے کہا پاک افغان بارڈر مستقل کھلا رکھنے کیلئے اقدامات کررہے ہیں ، امیگریشن کا عمل تیز بنانے کے لئے مزید کاؤنٹر بنائے جائیں گے، تجارت کے فروغ سے تعلقات میں بہتری آئےگی۔

ان کا کہنا تھا قبائلی اضلاع کی تعمیروترقی اب ہماری ذمہ داری ہے، طور خم بارڈر کو جدید سہولتوں سے آراستہ کررہے ہیں، کوشش ہے بارڈر کے دونوں طرف مشکلات کاخاتمہ ہو۔

کوشش ہے بارڈر کے دونوں طرف مشکلات کاخاتمہ ہو

وزیراعلیٰ کے پی نے کہا مستقل بنیادوں پربجلی اور انٹرنیٹ کےمسائل حل کیےجائیں گے، اس کے لئے ہم نے 75ملین روپے دے دیے ہیں ، جو بھی ایشوزہیں ان کوہم ٹھیک کریں گے، انشااللہ آہستہ آہستہ یہ سب چیزیں بھی ٹھیک ہوتی جائیں گی۔

محمودخان کا مزید کہنا تھا جتنی بھی سہولیات دے رہے ہیں عوام کے لئے ہیں، ہم نے خیبرپختونخوا کے لوگوں کو سہولیات دینی ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں