The news is by your side.

وزیرِ اعلیٰ پنجاب کی ملتان آمد، وی آئی پی موومنٹ سے شہری پریشان

ملتان: وزیرِ اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کی ملتان آمد پر وی آئی پی موومنٹ سے شہری پریشان ہو کر ٹریفک پولیس اہل کاروں سے جھگڑ پڑے۔

تفصیلات کے مطابق وزیرِ اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار سرکٹ ہاؤس ملتان پہنچ گئے، تاہم وی آئی پی موومنٹ شہریوں کے لیے وبالِ جان بن گئی، پریشان شہری ٹریفک پولیس اہل کاروں سے الجھ پڑے۔

ڈی جی خان بس حادثے میں جاں بحق ورثا اور زخمیوں میں ایک کروڑ 28 لاکھ 25 ہزار کے چیک تقسیم

وی آئی پی موومنٹ کے دوران موٹر سائیکل ہٹائے جانے پر ایک شہری کی ٹریفک اہل کاروں کے ساتھ تلخ کلامی ہوگئی، شہری کا کہنا تھا کہ انھوں نے وی آئی پی موومنٹ کے خلاف ووٹ دیا تھا۔

دریں اثنا وزیرِ اعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار سرکٹ ہاؤس ملتان پہنچ گئے، جہاں انھوں نے ڈی جی خان بس حادثے میں جاں بحق ورثا اور زخمیوں سے ملاقات کی اور ان میں امدادی چیک تقسیم کیے۔

انھوں نے متاثرین کی دل جوئی کی اور کہا کہ مالی امداد متاثرین کے دکھوں کا مداوا نہیں کر سکتی۔ وزیرِ اعلیٰ نے جاں بحق افراد کے ورثا اور زخمیوں میں ایک کروڑ 28 لاکھ 25 ہزار کے چیک تقسیم کیے۔ 21 جاں بحق افراد کے ورثا کو 5،5 لاکھ جب کہ 31 زخمیوں کو 75 ہزار فی کس کا چیک دیا گیا۔


یہ بھی پڑھیں:  ڈی جی خان: ٹریفک حادثے میں 19 افراد جاں بحق، صدر اور وزیرِ اعظم کا اظہارِ افسوس


دوسری طرف وزیرِ اعلیٰ پنجاب شہباز شریف اسپتال پہنچے تو اسپتال کے ملازمین نے باہر نکل کر تنخواہوں کے لیے احتجاج کیا۔ اسپتال کے ڈیلی ویجز ملازمین نے تنخواہوں کی عدم ادائیگی کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے وزیرِ اعلیٰ سے مسائل کے حل کا مطالبہ کیا۔

شہباز شریف اسپتال کے ڈیلی ویجز ملازمین کا کہنا تھا کہ انھیں تین ماہ سے تنخواہیں نہیں ملیں، انھوں نے وزیرِ اعلیٰ سے مطالبہ کیا کہ انھیں تنخواہیں ادا کی جائیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں