The news is by your side.

Advertisement

شہباز شریف نے رانا ثناءاللہ کے بیان پر معافی مانگ لی

اپوزیشن کی جانب سے معذرت مسترد کردی گئی، رانا ثناءاللہ کی برطرفی کا مطالبہ

لاہور: مسلم لیگ ن کے صدر شہباز شریف نے رانا ثناءاللہ کے بیان پر معافی مانگ لی، انھوں نے کہا کہ بیان سے کسی کی دل آزاری ہوئی ہو تو میں معذرت کرتا ہوں۔

تفصیلات کے مطابق آج تحریک انصاف کے رہنما علی زیدی نے ن لیگ کو اڑتالیس گھنٹے کا الٹی میٹم دیا تھا کہ شہباز شریف پی ٹی آئی خواتین کے لیے رانا ثنا کے نازیبا الفاظ پر معافی مانگیں ورنہ کراچی کی خواتین جوتے اٹھاکر گورنر ہاؤس جائیں گی۔

دریں اثنا شہباز شریف نے عمران خان کے نکات پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ ان کو کے پی میں گیارہ نکات پرعمل کرنے کا شان دار موقع ملا لیکن انھوں نے اس سے فائدہ نہیں اٹھایا۔

شہباز شریف نے کہا کہ پنجاب سمیت دیگرصوبوں میں بھی انتخابی مہم چلائیں گے کیوں کہ دیگر صوبوں کی ترقی بھی ضروری ہے، ہم نے جنوبی پنجاب کی ترقی وخوش حالی کے لیے دس سال میں بے مثال اقدامات کیے۔

علی زیدی نے ن لیگ کو نازیبا الفاظ پر معذرت کے لیے 48 گھنٹے کا الٹی میٹم دے دیا

معافی مسترد


دوسری طرف پاکستان عوامی تحریک کے ترجمان نے بیان جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ شہبازشریف معافی مانگنے کی بجائے رانا ثناءاللہ کو برطرف کریں، انھوں نے نہ صرف یہ کہ خواتین کی تذلیل کی بلکہ وہ سانحہ ماڈل ٹاؤن میں خواتین کے قاتل بھی ہیں۔

اپوزیشن رہنما محمود الرشید نے بھی شہباز شریف کی معذرت مسترد کردی ہے۔ انھوں نے مطالبہ کیا کہ شہبازشریف خواتین سے متعلق نازیبا الفاظ پر راناثنااللہ سے استعفیٰ لیں۔ ان کا کہنا تھا کہ جس نے جرم کیا ہے اس کے معافی مانگنے تک اسمبلی کارروائی نہیں چلنے دیں گے۔ رانا ثنا ایک بدبخت آدمی ہیں جو اس عمر میں بھی مہذب نہ بن سکے، وہ اب بھی دینی، اخلاقی اور معاشرتی اقدار سے ناواقف ہیں۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں