The news is by your side.

Advertisement

’’ ایسے نہیں چلے گا‘‘ ، وزیر اعلیٰ سندھ آئی جی پر برہم

کراچی: وزیر اعلیٰ سندھ نے شہر قائد میں پولیس کی فائرنگ سے ہونے والی مبینہ ہلاکتوں پر آئی جی پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کلیم امام کی کارکردگی پر عدم اطمینان کا اظہار کردیا۔

تفصیلات کے مطابق وزیر اعلیٰ سندھ کی زیر صدارت اعلیٰ سطح کا اجلاس ہوا جس میں آئی جی سندھ کلیم امام نے بھی شرکت کی۔ مراد علی شاہ نے شہر قائد میں پولیس فائرنگ سے ہلاکتوں کے واقعات پر برہمی کا اظہار کیا۔

وزیراعلیٰ سندھ کا آئی جی کو کہنا تھا کہ ’’ ایسے نہیں چلے گا،سندھ حکومت اب اپنی آئینی رٹ برقرار رکھےگی، میں صوبےکا چیف ایگزیکٹو ہوں، آپ سمیت سارے محکمے کو سندھ کابینہ کی ہدایات پرعمل کرنا ہوگا۔

مزید پڑھیں: قائد آباد میں پولیس مقابلہ : ملزم اور اہلکار زخمی، فائرنگ کی زد میں آکر بچہ جاں بحق

مراد علی شاہ کا کہنا تھا کہ ’احسن اور دیگر واقعات کی حکومت کو کوئی رپورٹ نہیں کی گئی، کابینہ اور میں ذاتی طور پر آپ کی کارکردگی سے بالکل مطمئن نہیں اور نہ ہی ہمیں اقدامات پر کوئی خوشی ہے‘۔

یاد رہے کہ شہر قائد کے علاقے گلشن اقبال میں واقع یونیورسٹی روڈ پر ڈیڑھ سال کا بچہ پولیس کی مبینہ فائرنگ سے جاں بحق ہوگیا تھا، صرف دس روز کے دوران پولیس کی غفلت کا یہ دوسرا واقعہ تھا۔

مجموعی طور پر 6 ماہ میں پولیس مقابلوں کے دوران پانچ شہری پولیس کی اندھی گولیوں کا نشانہ بنے جن میں دو کمسن بچے بھی شامل ہیں، گزشتہ برس ڈیفنس میں انتظار پولیس فائرنگ سے انتظار نامی نوجوان جاں بحق ہوا۔

یہ بھی پڑھیں: کراچی: سندھ پولیس کے اہلکاروں کی فائرنگ سے ڈیڑھ سالہ جاں بحق

بعد ازاں امل کا واقعہ بھی پیش آیا جس پرسابق چیف جسٹس نے بھی نوٹس لیا۔ ایک ماہ قبل میڈیکل کی طالبہ نمرہ بیگ بھی مقابلے کے دوران اندھی گولی کی زد میں آئی اور اپنی جان گنوا بیٹھی جبکہ لانڈھی میں بھی تیرہ روز قبل ایک بچہ جاں بحق ہوا تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں