The news is by your side.

Advertisement

کورونا کے بڑھتے ہوئے کیسز، اسپتالوں میں گنجائش ختم ، وزیراعلیٰ سندھ نے خطرے کی گھنٹی بجادی

کراچی : وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے خطرے کی گھنٹی بجاتے ہوئے کہا ہے کہ کورونا کیسز بڑھنے کی وجہ سے ہمارے اسپتالوں میں گنجائش ختم ہوچکی ہے۔

تفصیلات کے مطابق جہاں پاکستان میں کورونا کے مثبت کیسز کی شرح میں کمی آرہی ہیں ، وہیں سندھ میں کورونا کیسز میں مسلسل اضافہ ریکارڈ کیا جارہا ہے۔

اس حوالے سے وزیر اعلیٰ سندھ نے نیشنل کوآرڈی نیشن کمیٹی کو بتایا کہ سندھ میں کیسز بڑھ رہے ہیں اور نئےکیسزکی وجہ سےاسپتالوں پردباؤہے، ہمارے اسپتال،خاص طورپرپرائیویٹ اسپتال بھرچکےہیں۔

وزیراعلیٰ سندھ کا کہنا تھا کہ ہمارےکورونااسپتال میں بھی گنجائش ختم ہوچکی ہے ، ایکسپوسینٹر80فیصدبھرچکاہے، نئےمریض سول،جےپی ایم سی اورلیاری میں داخل کررہےہیں۔

مراد علی شاہ نے مزید بتایا کہ کراچی میں 10.22 فیصد کوروناکیسز، حیدرآبادمیں 9.21فیصد اور باقی شہروں میں 3.68 فیصد کیسزہیں۔

کورونا ویکسی نیشن کے حوالے سے مراد علی شاہ نے کہا کورونا ویکسی نیشن میں ہم وفاق کی پالیسی پرعمل پیراہیں، سندھ میں روزانہ70ہزارویکسی نیشن لگ رہی ہیں، روزانہ2 لاکھ ویکسین کاہدف پوراکرناچاہتےہیں، موبائل سسٹم بنایا جس سےروزانہ1لاکھ ویکسی نیشن لگیں گی۔

دوسری جانب ڈاکٹر قیصر سجاد نے اے آر وائی نیوز کے پروگرام باخبر سویرا میں گفتگو کرتے ہوئے کہا پاکستان میں زیادہ تر کیسز برطانوی ویرینٹ کے ہیں اور یہ خطرہ بھی تھا کہ بھارتی کورونا وائرس ملک میں موجود تو نہیں لیکن اللہ کا شکر ہے اسلام آباد اور کراچی میں بروقت بھارتی کورونا وائرس کی تشخیص ہوئی ہے۔

کیسز کے حوالے سے ان کا کہنا تھا کہ کورونا کی تیسری لہر کے آغاز میں پنجاب میں بہت زیادہ کیسزسامنے آئےجبکہ اس وقت سندھ میں کیسز کم تھے ، لیکن اب سندھ میں کیسز میں اضافہ ہورہا ہے، لوگ جتنی جلدی ویکسینیٹ ہوں گے ، اتنی جلدی ساری چیزیں کھول دی جائیں گی۔

خیال رہے این سی او سی کے سربراہ اسد عمر کا کہنا تھا کہ مجموعی طور پر ملک بھر میں کورونا وبا کے پھیلاؤ میں کمی نظر آرہی ہے لیکن سندھ میں کورونا کا پھیلاؤ زیادہ ہے ، اس لئے احتیاط زیادہ کرنی ہوگی۔

انہوں نے کہا تھا کہ کورونا سے بچاؤ کا واحد حل ویکسینیشن ہے، ہمیں ویکسینیشن پر زیادہ توجہ دینا ہے، مجموعی طور پر اب تک 70 لاکھ سے زائد ویکسینیشن ہوچکی ہے، رواں سال کے آخر تک 7 کروڑ تک ویکسینیشن چاہتے ہیں، چاہتے ہیں عید سے پہلے ایسی صورت حال پر پہنچیں کہ بندشیں نہ کرنا پڑیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں