site
stats
پاکستان

وزیراعلیٰ سندھ کا سرکلر ریلوے سے متعلق سخت فیصلہ

کراچی: وزیر اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے کہا کہ کراچی میں‌ ٹرانسپورٹ کے مسائل کا مثبت حل اولین ترجیح ہے، انہوں نے اظہار برہمی کرتے ہوئے کہا کہ غفلت برنتے والوں کے خلاف عبرناک کارروائی کی جائے گی.

تفصیلات کے مطابق وزیر اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کی صدارت میں سرکلر ریلویز سے متعلق اجلاس معنقد ہوا، اجلاس میں وزیراعلیٰ کو بریفنگ دی گئی کہ کے سی آر کے روٹ پر 762کچے مکانات ہیں.

یہاں‌پڑھیں:سندھ : وزیراعلی سندھ کی صدارت میں سرکلر ریلوے کے معتلق اجلاس

اجلاس کے دوران مراد علی شاہ نے انکروچمنٹ کے حوالے سے اظہار برہمی کرتے ہوئے کہا کہ جب انکروچمنٹ ہوتی ہے تو متعلقہ انتظامیہ اور پولیس سورہی ہوتی ہے.

مراد علی شاہ نے یہ بھی کہا کہ انکروچمنٹ کو ہٹایا جاتا ہے تو حکومت بدنام ہوتی ہے،انہوں نے متنبہ کیا کہ اب اگر دوبارہ انکروچمنٹ ہوئی تو متعلقہ افسران کے خلاف ایسی کارروائی ہوگی جو دنیا دیکھے گی.

ان کا کہنا تھا کہ اب  یہ مذاق ختم ہونا چاہیے، ڈسٹرکٹ ایڈمنسٹریشن اور پولیس پر لازم ہے کہ وہ اپنا کردار ادا کرے، شہریوں کی خواہش اور ضرورت ہے کہ شہر میں ٹرانسپورٹ کے مسائل حل ہوں.

یہاں پڑھیں: گجر نالے کے اطراف میں تجاوزات کے خلاف آپریشن آخری مراحل میں داخل

دوران اجلاس 2013کے بعد قائم کی گئی تجاوزات کو ہٹانے کا اصولی فیصلہ کرلیا گیا، تجاوزات ہٹانے کے بعد انہیں معاوضہ دینے کا بھی سوچوں گا.
وزیراعلی سندھ نے کہا کہ کے سی آر “سی پیک ” میں شامل ہو چکی ہے، جس کے لئے ہم نے کے لئے بڑی محنت کی ہے، تجاوزات کے باعث عوامی سہولت کے منصوبے میں تاخیرنہیں کرسکتے ہیں.

انہوں نے کمشنر اور ڈپٹی کمشنرز کو ہدایت کی کہ تجاوزات ہٹانے میں کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جائے، وقت دینے کے بعد تجاوزات گرانے کے لئے مشینری لگائیں، تجاوزات ہٹانے کے بعد محکمہ ٹرانسپورٹ کے سی آر روٹ پر فینسنگ لگائے

وزیراعلی سندھ مراد علی شاہ نے کہا کہ کراچی کو بہترکرنا ہے توآپ سب کا ساتھ چاہئے، شہر کو قبضہ اورترقی میں رکاوٹ بننے والے دشمنوں سے نجات دلائیں.

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top