The news is by your side.

Advertisement

سرکلر ریلوے پر ستمبر میں کام شروع ہوجائے گا، مراد علی شاہ

کراچی: وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے کہا ہے کہ روڈ فورم میٹنگ میں جو وعدے کیے انہیں پورا کریں گے، ون بیلٹ ون روڈ کے ذریعے 64 ممالک پاکستان سے جڑ جائیں گے، سرکلر ریلوے پر کام کا آغاز ستمبر میں کردیا جائے گا۔

وزیراعظم کے ہمراہ دورہ چین کے بعد اسلام آباد سے کراچی واپسی پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مراد علی شاہ نے کہا کہ روڈ فورم مٹینگ ایسی تھی جیسے اقوام متحدہ کی ہو، چین حکومت سے جو وعدے کیے انہیں پورا کریں گے۔

انہوں نے کہا کہ کراچی کے عوام کو خوشخبری دینے کے لیے بریفنگ دے رہا ہوں کہ ستمبر میں کراچی سرکلر ریلوے کے کام کا افتتاح کریں گے، ون بیلٹ روڈ کے ذریعے 64 ممالک آپس میں جڑیں گے۔

مراد علی شاہ نے کہا کہ سی پیک کی سیکیورٹی کے لیے آرمی کا ایک ڈویژن، رینجرز اور پولیس موجود ہے، ٹرانسپوٹرز کو کئی کلومیٹر کا اضافی فاصلہ طے کرنا قبول نہیں جبکہ ہمیں ٹریڈ روٹس استعمال کرنے کے لیے انفرااسٹریکچر کو بہتر بنانا ضروری ہے۔

وزیر اعلیٰ سندھ نے مزید کہا کہ سرکلر ریلوے پر کام کا آغاز  ستمبر میں کردیا جائے گا تاہم  تنقیدکے باوجود تجاوزات کافی حد تک ہٹادی گئی ہیں۔

مصطفیٰ کمال کے ملین مارچ پر تبصرہ

وزیراعلیٰ سندھ نے کہا کہ ایک پارٹی نے 14 تاریخ کو ملین مارچ کرنے کی درخواست کرتے ہوئے یقین دہانی کروائی کہ ایف ٹی سی پر شام 7 بجے تک مارچ ختم کردیا جائے گا تاہم پارٹی قیادت نے میڈیا پر اعلان کیا کہ وہ وزیر اعلیٰ ہاؤس آنا چاہتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ شہریوں نے خوف ختم ہونے پر باہر نکلنا شروع کیا تو دھرنے شروع کردیے گئے، دھرنا دینے والوں کے جو بھی مطالبات ہیں وہ ہمارے علم میں ہیں، وزیراعلیٰ ہاؤس پر میرے ساتھ اور بھی لوگ رہتے ہیں۔

مراد علی شاہ نے مزید کہا کہ قانون کی خلاف ورزی کرنے پر کچھ لوگوں کو حراست میں لیا گیا اور چھوڑ بھی دیا مگر ایسا تاثر دینے کی کوشش کی گئی کہ مظاہرین پر بہت ظلم کیا گیا، شہر میں کام شروع ہوا تو لوگوں کو تکلیف شروع ہوگئی، پانی کے مسئلے کو حل کرنے کے لیے وفاق کو درخواست لکھ دی ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں