The news is by your side.

Advertisement

دہشت گردی کے خلاف بلاتفریق جنگ لڑی، انتہا پسندی کو جڑ سے ختم کردیں گے، آرمی چیف

کوئٹہ: آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا ہے کہ دہشت گردی کا کوئی مذہب، نسل یا فرقہ نہیں ہوتا، پاکستان میں دہشت گردی کے خلاف بلاتفریق جنگ لڑی، انتہا پسندی کو جڑ سے ختم کردیں گے۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے سیکنڈ نیشنل سیکیورٹی ورکشاپ بلوچستان سے خطاب کرتے ہوئے کیا، پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ آئی ایس پی آر کے مطابق ورکشاپ کا اہتمام سدرن کمانڈ نے بلوچستان حکومت کے اشتراک سے کیا۔

ورکشاپ میں کمانڈر سدن کمانڈ لیفٹیننٹ جنرل عاصم سلیم باجوہ بھی موجود تھے، دو ہفتوں کی ورکشاپ کا مقصد قومی سیکیورٹی سے متعلقہ امور پر روشنی ڈالنا ہے، ورکشاپ میں جامع قومی سیکیورٹی کو وضع کرنے کے تمام پہلوؤں پر بھی بات ہوگی، شرکا میں بلوچستان اراکین اسمبلی، میڈیا اور سول سروز کے نمائندے شامل تھے۔

آرمی چیف نے کہا کہ خطرات سے مقابلے کے لیے جامع قومی ردعمل ضروری ہے، موثر حکمت عملی کے لیے پاک فوج کا ریاستی اداروں کے ساتھ رابطہ ہے۔

انہوں نے کہا کہ قوم کے تعاون سے شدت پسندی، انتہا پسندی کو جڑ سے ختم کردیں گے، پاکستان نے دہشت گردی کی لعنت کے خلاف بلا امتیاز کارروائی کی ہے۔

مزید پڑھیں: آرمی چیف جنرل قمر باجوہ کا کراچی کور ہیڈ کوارٹرز کا دورہ

قبل ازیں آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے کور ہیڈ کوارٹرز کراچی کا دورہ کیا، آرمی چیف کو سندھ کی سیکیورٹی صورتحال پر بریفنگ دی گئی۔

آرمی چیف نے اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے کراچی میں قیام امن کیلئے رینجرز اور سیکیورٹی اداروں کی تعریف کی۔ اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے آرمی چیف نے اقتصادی سرگرمیوں کی بحالی پر سیکیورٹی اداروں کی کارکردگی کو سراہا، ان کا کہنا تھا کہ امن کے استحکام کیلئے سیکیورٹی اقدامات جاری رکھے جائیں۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں