The news is by your side.

Advertisement

کالج طالبہ کی جانب سے ہراسگی کی درخواست واپس لینے کے باوجود لیکچرار کا ٹرانسفر

لاہور: ایم اے او کالج میں طالبہ کی جانب سے ہراسگی کی درخواست واپس لینے کے باوجود لیکچرار کا ٹرانسفر کردیا گیا ، طالبہ نےہراسگی کی درخواست دینے کی وجہ غلط فہمی قرار دی تھی۔

تفصیلات کے مطابق لاہور کے ایم اے او کالج میں طالبہ کو ہراساں کرنے کے معاملے پر کالج کے لیکچرار کا ٹرانسفرکر دیا گیا، طالبہ کی جانب سے ہراسگی کی درخواست واپس لینے کے باوجود لیکچرارکو ٹرانسفر کیا۔

طالبہ نے ہراسگی کی درخواست دینے کی وجہ غلط فہمی قرار دی تھی اور کہا تھا کہ لیکچرارنے مجھے ہراساں نہیں کیا، غلط فہمی کی وجہ سےہراساں کرنےکی درخواست دی تھی۔

انکوائری کمیٹی کے سامنے دونوں کے میسجزلائے گئے ، مکمل تحقیقات پر ہراساں کرنا ثابت نہیں ہوا، ذرائع کا کہنا تھا کہ لیکچراراورطالبہ نےرضامندی سےایک دوسرےکومیسج کیے، ناراضگی ہونےپرطالبہ نےلیکچرارکیخلاف ہراساں کی درخواست دی۔

ذرائع نے بتایا دونوں کےمیسجزمنظرعام پرآگئے تا طالبہ نے درخواست واپس لےلی۔

یاد رہے لاہور کے ایم اے او کالج کے شعبہ سائیکلوجی کے لیکچرار نے مبینہ طور پر ایم ایس کرنے والی طالبہ کو موبائل پر نازیبا پیغام بھیجا اور نمبر بڑھانے کی مشروط پیش کش بھی کی تھی۔

طالبہ کی شکایت پر پرنسپل نے نوٹس لے کر چار رکنی تحقیقاتی کمیٹی تشکیل دیتے ہوئے کہا تھا کہ طالبہ کو ہراساں کرنا غیر اخلاقی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں