The news is by your side.

بیوی کے انتقال کے بعد زندگی کیسے گزری؟ حنیف راجہ ذکر پر افسردہ ہوگئے

کراچی : معروف کامیڈین اور ٹی وی میزبان حنیف راجہ اپنی مرحومہ اہلیہ کا ذکر کرتے ہوئے افسردہ ہوگئے انہوں نے بتایا کہ میری وائف بہت جلدی مجھے اور بچوں کو چھوڑ کر چلی گئیں۔

اے آر وائی ڈیجیٹل کے پروگرام گڈ مارننگ پاکستان میں حنیف راجہ نے بحیثیت مہمان خصوصی شرکت کی ان کے ہمراہ ان کا بیٹا بہو اور صاحبزادی بھی موجود تھیں۔

پروگرام کی میزبان ندا یاسر نے باتوں باتوں میں ان کی مرحومہ اہلیہ کا ذکر چھیڑ دیا جس کے جواب انہوں نے انتہائی افسردگی کے ساتھ اپنی اہلیہ کی موت اور اس کی وجہ بیان کی۔

حنیف راجہ نے کہا کہ میری اہلیہ کو سال 2012 میں کینسر تشخیص ہوا تھا میں نے ہرممکن طریقے سے ان کا بھرپور علاج بھی کروایا لیکن وہ یہ تکلیف سال 2018 تک 6 سال سہتی رہیں۔

ایک سوال کے جواب میں ان کا کہنا تھا کہ اس دوران میں نے کبھی میڈیا یا انڈسٹری کے دوستوں سے اس بات کا تذکرہ کبھی نہیں کیا کیونکہ اکثر لوگ یہ سمجھیں گے کہ شاید میں امداد مانگ رہا ہوں۔

حنیف راجہ کا کہنا تھا کہ میری اہلیہ بہت باہمت خاتون تھیں میں جب بھی اس حوالے سے پریشان ہوتا تھا تو وہی میرا حوصلہ بڑھاتی تھیں اور انہوں نے بچوں کا بھی بہت اچھے طریقے سے خیال رکھا۔

انہوں نے بتایا کہ کینسر کی مریضہ ہونے کے باوجود جب وہ اپنی کیمو تھراپی کروانے جاتی تھیں تو بچوں کیلئے خود کھانا بنا کر جاتی تھیں۔ ان کا انتقال رمضان المبارک کی 27ویں شب کو ہوا تھا۔

اس موقع پر حنیف راجہ کے بچوں نے بتایا کہ پاپا نے ہم سے کبھی کچھ نہیں چھپایا، پاپا نے بھی ہمیں بہت ہمت دی انہوں نے ہمیں مما کی بیماری سے متعلق سب کچھ بتادیا تھا تاکہ ہم ذہنی طور پر تیار رہیں۔

واضح رہے کہ حنیف راجہ کے بیٹے کی شادی اکتوبر 2022 میں منعقد ہوئی جس میں جس میں دوست احباب، عزیز واقارب اور اہم شخصیات نے شرکت کی۔ حنیف راجہ نے بتایا کہ نکاح کے وقت میرا بیٹا احمد راجہ اپنی ماں کو یاد کرتے ہوئے پھوٹ پھوٹ کر روتا رہا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں