The news is by your side.

Advertisement

موقع شناس جیری لیوس کی کام یابیوں کی کہانی

جیری لیوس کو ہالی وڈ کا صفِ اوّل کا مزاحیہ اداکار کہا جاتا ہے۔ وہ ایک ایسا فن کار تھا جو موقع شناس تھا اور اس کی ایک خوبی بَروقت فیصلہ کرنا تھا۔ جیری نے جہاں اداکاری کے شعبے میں‌ اپنی صلاحیتوں کی بنا پر نام کمایا، وہیں اپنی شخصی خوبی کی بنیاد پر مالی فوائد بھی حاصل کیے۔

جیری لیوس نیو جرسی میں 1926ء کو پیدا ہوا۔ اوائلِ زمانہ میں اس نے ڈین مارٹن کے ساتھ اپنے فن کا مظاہرہ شروع کیا۔ ڈین مارٹن ایک سنگر اور کامیڈین تھا اور یہ دونوں نائٹ کلبس کے علاوہ ریڈیو اور ٹیلی ویژن پر اپنے فن کا مظاہرہ کرنے لگے۔ ان کی جوڑی شائقین میں مقبول ہوتی چلی گئی اور ایک وقت آیا جب وہ فلم نگری تک پہنچ گئے۔ اس جوڑی کی پہلی فلم ’’مائی فرینڈ ارما‘‘ ریلیز ہوئی تو خود ان کے وہم و گمان میں‌ نہ تھا کہ وہ راتوں رات اسٹار بن جائیں گے۔ اس فلم نے زبردست بزنس کیا۔

اس فلم کے بعد جیری لیوس اور ڈین مارٹن کے لیے ہالی وڈ سے آفرز کا گویا ڈھیر لگ گیا اور ان کی مزید فلمیں باکس آفس پر کام یابی سے ہمکنار ہوئیں۔ لیوس اور مارٹن خوب رُو اور باصلاحیت فن کار تھے۔ یہ جوڑی آٹھ سال تک برقرار رہی اور پھر جیری لیوس نے اپنا راستہ جدا کرلیا اور کامیڈی فلمیں پروڈیوس کرنے لگا۔

وہ نہایت باصلاحیت تھا اور اس نے جان لیا تھاکہ وہ خود ہی نہ صرف شائقین کو متوجہ رکھ سکتا ہے بلکہ فلمی دنیا سے مالی فائدہ بھی اٹھا سکتا ہے۔ 1956 میں‌ مارٹن سے الگ ہونے کا فیصلہ کرنے کے بعد جیری اپنی فلمیں لکھنے کے علاوہ ہدایت کار بھی بن گیا اور باکس آفس سے فلم کی آمدنی کا ساٹھ لینا شروع کردیا۔ فلم ساز اس کی مقبولیت کے سبب اس کے ناز نخرے برداشت کرتے تھے۔ جیری لیوس کا نام ہی گویا کام یابی کی ضمانت تھا۔

جیری نے اپنی فلموں‌ میں‌ کامیڈی رول نبھانے کا سلسلہ جاری رکھا اور ناٹی پروفیسر، بیل بوائے جیسی کام یاب فلمیں ہالی وڈ کو دیں۔ فلم اور ٹیلی ویژن کی دنیا میں متعدد اعزازات اپنے نام کرنے والے جیری لیوس نے زندگی کی 91 بہاریں‌ دیکھیں۔

فلموں کا یہ مشہور کامیڈین، کام یاب فلم ڈائریکٹر، پروڈیوسر، اسکرین رائٹر اور گلوکار 2017 میں ہمیشہ کے لیے یہ دنیا چھوڑ گیا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں