The news is by your side.

Advertisement

نسلہ ٹاور کی کنٹرولڈ ڈیمولیشن کیسے ممکن ہوگی؟ پلان کیلئے اہم اجلاس طلب

کراچی : نسلہ ٹاور کو کنڑولڈ بلاسٹنگ کے ذریعے مسمار کرنے کے معاملے پر کمشنر کراچی نے اہم اجلاس طلب کرلیا ، جس میں حکمت عملی تیار کی جائے گی۔

تفصیلات کے مطابق نسلہ ٹاور کی کنٹرولڈ ڈیمولیشن کیلیے اعلی حکام آج سر جوڑ کر بیٹھیں گے ، کمشنر کراچی نے متعلقہ اداروں کے سربراہوں سے مشاورت کا فیصلہ کرلیا اور کمشنر آفس میں ساڑھے چار بجے اہم اجلاس طلب کرلیا ہے۔

اجلاس میں شرکت کے لیے ایف ڈبلیو او، این ایل سی، انجینئرنگ فائیو کور اور کراچی پولیس چیف مدعو کیا گیا ہے جبکہ این ای ڈی کے وائس چانسلر اور اینجینیرینگ ایکسپرٹ، ایم ڈی سولڈ ویسٹ، میونسپل کمشنر کراچی اور متعلقہ ضلعی انتظامیہ بھی شرکت کرے گی۔

اجلاس میں حکمت عملی تیار کی جائے گی اور کنٹرولڈ ڈیٹونیشن کو کس طرح سے استعمال کیا جائے اور کن احتیاطی تدابیروں کو بروئے کار لایا جائے، پلان تیار کیا جائے گا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ ڈیٹونیشن کو استعمال کرنے کے لیے اجلاس میں کمشنر کراچی کو بریفنگ دی جائے گی اور آپریشن سے متعلق لاء ان آرڈر کی صورتحال کے لیے رینجرز اور پولیس کے اعلی حکام بھی شرکت کریں گے۔

کمشنر کراچی آقبال میمن کا کہناہے کہ عدالتی احکامات کی روشنی میں انتظامی امور تیزی سے جاری ہیں ، تمام معاملات کو مانیٹر کررہا ہوں۔

دوسری جانب سپریم کورٹ کے حکم پر نسلہ ٹاور کو کنٹرولڈ بلاسٹنگ کے ذریعے مسمار کرنے کے معاملے پر کمشنر کراچی نے ایف ڈبلیو او حکام سے معاونت کی درخواست کردی۔

درخواست میں کہا گیا ہے کہ کمشنر کراچی کو سپریم کورٹ نے سات روز میں فیصلے پر عمل درآمد کو حکم دیا ہے، سپریم کورٹ کے حکم کی روشنی میں دو روز میں تکینیکی سروے مکمل کرکے آگاہ کیا جائے۔

متن میں کہا کہ نسلہ ٹاور کی کنٹرولڈ ڈیمولیشن میں ایف ڈبلیو او انتظامیہ کو معاونت فراہم کرے۔

کمشنر کراچی کی جانب سے ڈائریکٹر جنرل سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی سے بھی تعاون کی درخواست کرتے ہوئے کہا سات روز میں نسلہ ٹاور کو کنڑولڈ ڈیمولیشن کے ذریعے مسمار کرنا ہے۔

کمشنر کراچی کا کہنا تھا کہ عدالتی حکم ہے، دو روز میں تکینیکی سروے مکمل کرکے رپورٹ کمشنر آفس میں جمع کروائی جائے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں