The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب: نکاح میں درج شرط سے روگردانی شوہر کو مہنگی پڑ گئی

ریاض: نکاح میں درج شرط سے روگردانی شوہر کو مہنگی پڑ گئی، پڑھائی کی اجازت نہ دینے پر بیوی نے ’فسخ نکاح‘ کا دعویٰ دائر کر دیا۔

تفصیلات کے مطابق سعودی عرب میں شوہر کی وعدہ خلافی کو دیکھتے ہوئے خاتون نے ’فسخ نکاح‘ کا دعویٰ دائر کر دیا، شوہر نے نکاح نامے میں درج شرط پر عمل نہ کرتے ہوئے اہلیہ کو پڑھائی مکمل کرنے سے روکا تھا۔

سبق نیوز کے مطابق خانگی امور کے وکیل جعفر جمل اللیل نے بتایا کہ مکہ میں ایک خاتون نے اس کے ذریعے اپنے شوہر کے خلاف نکاح ختم کرنے کا دعویٰ دائر کیا ہے۔

خاتون کا کہنا تھا کہ انھوں نے نکاح کے وقت یہ شرط عائد کی تھی کہ شادی کے بعد شوہر کو پڑھائی مکمل کرنے پر کوئی اعتراض نہ ہوگا، تاہم شوہر نے اہلیہ کو پڑھائی جاری رکھنے سے منع کر دیا۔

خانگی امور کے وکیل جعفر کا اس حوالے سے کہنا تھا کہ خانگی قانون کے تحت نکاح نامے میں درج کی گئی شرائط پر عمل کرنا ضروری ہے، عمل نہ کرنا وعدہ خلافی کے زمرے میں آتا ہے۔

وکیل کے مطابق قانونی طور پر فسخ نکاح کا دعویٰ ان صورتوں میں دائر کیا جا سکتا ہے اگر شوہر منشیات کا عادی ہو، طویل عرصے سے غائب ہو، خطرناک نفسیاتی مریض ہو، تشدد کرتا ہو، نان نفقہ ادا نہ کرتا ہو وغیرہ، نیز خلع کے برعکس فسخ نکاح کی بیشتر صورتوں میں معاوضے کا مطالبہ نہیں کیا جا سکتا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں