The news is by your side.

Advertisement

ڈھاکہ میں پیدا ہونے والی جڑی ہوئی لڑکیاں انتقال کرگئیں

ڈھاکہ: ڈھاکہ میں جڑی ہوئی پیدا ہونے والی جڑواں لڑکیاں ایک ہفتے تک زندگی اور موت کی کشمکش میں مبتلا رہنے کے بعد انتقال کرگئیں۔

بنگلہ دیش کے ہزاروں افراد نے ان جڑواں لڑکیوں کودیکھنے کے لئے اسپتال کا رخ کیا جو کہ دو سر، دو دل لیکن ایک جسم کے ساتھ پیدا ہوئی تھیں۔

لڑکیوں کو پیدائش کے بعد ڈھاکہ کے سب سے بڑے سرکاری اسپتال ’ڈھاکہ میڈیکل کالج اسپتال‘ منتقل کیا گیا جہاں اسپیشلسٹ کی ایک ٹیم ان کی دیکھ بھال کررہی تھی۔

لڑکی کے والد جمال میاں کا کہنا ہے انہوں نے اپنی بیٹی کو عوامی قبرستان میں دفن کردیا ہے، ان کا کہنا تھا کہ ان کے پاس اپنی بیٹی کی تدفین کے پیسے بھی نہیں تھے ، اسپتال کے ڈاکٹروں نے انہیں پیسے جمع کرکے دئیے۔

ان کا کہنا تھا کہ بچیوں کی ماں کی طبعیت ٹھیک نہیں ہے لہذا اسے ابھی تک لڑکی کی فوتگی کی اطلاع نہیں دئ گئی ہے۔

واضح رہے کہ اس قسم کے بچوں میں بچنے کا تناسب پانچ سے پچیس فیصد تک ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں