The news is by your side.

Advertisement

کیا شاہی خاندان میگھن مرکل کے خلاف کوئی سازش کر رہا تھا؟

برطانوی شاہی خاندان کے شہزادے ہیری خاندان سے علیحدہ ہونے کے بعد اپنی اہلیہ میگھن مرکل کے ساتھ امریکا میں زندگی گزار رہے ہیں، میگھن کی دوست کا کہنا ہے کہ انہیں ہمیشہ یہ یقین تھا کہ ان کے خلاف کوئی سازش کی جارہی ہے۔

شہزادہ ہیری اور میگھن مرکل کی شاہی خاندان سے علیحدگی کے بعد ایسی خبریں سامنے آئیں جن کے مطابق میگھن مرکل خود کو شاہی خاندان میں موزوں نہیں سمجھتی تھیں اور ذہنی طور پر پریشان تھیں۔

اب ان کی ایک دوست نے بھی اس بات کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ میگھن کو یقین تھا کہ ان کی شادی کے بعد سے ان کے خلاف کوئی سازش تیار کی جارہی ہے۔

مذکورہ دوست کا کہنا ہے کہ شادی کے کچھ عرصے بعد جوڑا فروگمور کاٹیج میں منتقل ہو کر علیحدہ رہنے لگا تھا تاہم وہاں میگھن خود کو مزید تنہا محسوس کرتی تھیں۔

میگھن کو لگتا تھا کہ شاہی خاندان میں ان کے خلاف کوئی سازش ہو رہی ہے چنانچہ انہوں نے شاہی خاندان کے افراد سے خود کو الگ تھلگ کردیا تھا، انہیں لگتا تھا کہ وہ یہاں فٹ نہیں ہیں اور وہ ایسی زندگی گزارنے کی عادی نہیں تھیں۔

وہ اپنے دوستوں کی عدم موجودگی سے بھی خود کو تنہا محسوس کرتی تھیں شاید یہی وجہ تھی کہ انہوں نے لاس اینجلس منتقل ہونے کا فیصلہ کیا۔

گزشتہ برس شاہی خاندان سے علیحدگی کے بعد جوڑا پہلے کینیڈا گیا، وہاں کچھ عرصہ گزارنے کے بعد وہ اپنی طے شدہ شاہی مصروفیات میں شرکت کرنے لندن واپس آئے، بعد ازاں لاک ڈاؤن شروع ہونے سے پہلے وہ لاس اینجلس چلے گئے اور مستقل وہیں سکونت اختیار کرلی۔

قریبی افراد کا کہنا ہے کہ امریکا منتقل ہونے کے بعد میگھن تو اپنے دوستوں اور والدہ کی موجودگی میں نہایت خوش باش ہیں تاہم شہزادہ ہیری اس نئی زندگی سے مطابقت کرنے میں جدوجہد کرتے دکھائی دیتے ہیں۔

وہ برطانیہ میں اپنے خاندان کے ساتھ ایک نہایت مختلف زندگی گزارتے رہے ہیں اور اس زندگی کے عادی نہیں چنانچہ انہیں اس سے عادی ہونے میں وقت لگ رہا ہے۔

میگھن مرکل اور شہزادہ ہیری مئی 2018 میں رشتہ ازدواج میں منتقل ہوئے تھے، جوڑے کا ایک بیٹا آرچی بھی ہے جو مئی 2019 میں پیدا ہوا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں