The news is by your side.

Advertisement

دستورِ پاکستان 44 سال کا ہوگیا

دستور پاکستان 44 سال کا ہوگیا۔ سنہ 1973 میں قومی اسمبلی سے متفقہ طور پر منظور شدہ آئین پاکستان کی مناسبت سے آج ملک بھر میں یوم دستور منایا جا رہا ہے۔

سنہ 1971 میں مشرقی پاکستان کی علیحدگی کے بعد 1970 کے انتخابات کی بنیاد پر سن 72 میں اسمبلی بنائی گئی۔ اسمبلی میں نئے آئین کی تشکیل کے لیے کمیٹی کا قیام عمل میں لایا گیا۔

کمیٹی نے 8 ماہ کے بعد 10 اپریل 1973 میں آئین کا مسودہ پیش کیا جسے وفاقی اسمبلی نے 135 ووٹوں سے منظور کر لیا۔ 12 اگست کو صدر مملکت ذوالفقار علی بھٹو نے نئے آئین پر دستخط کیے۔

شہید ذوالفقار علی بھٹو کو سن 73 کے آئین کا بانی تصور کیا جاتا ہے۔ دستور پاکستان کے تحت ملک میں نظام حکومت پارلیمانی تجویز کیا گیا اور اس کا سربراہ وزیر اعظم کو بنایا گیا۔

دستور کے مطابق پاکستان کا سرکاری مذہب اسلام، صدر اور وزیر اعظم کا مسلمان ہونا ضروری ہے۔

آئین منظوری کے 42 سال بعد سنہ 2015 میں چیئرمین سینیٹ رضا ربانی نے 10 اپریل کو یوم دستور منانے کا فیصلہ کیا۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں