The news is by your side.

Advertisement

کراچی پارک سانحہ: کنٹریکٹر نے ڈپٹی کمشنر کا حکم ہوا میں اڑا دیا

کراچی: پرانی سبزی منڈی پر واقع تفریحی پارک میں جھولا گرنے کے افسوس ناک واقعے پر ڈپٹی کمشنر ایسٹ نے کنٹریکٹر کو طلب کیا تاہم پارک کنٹریکٹر نے ان کا حکم ہوا میں اڑا دیا۔

تفصیلات کے مطابق ڈپٹی کمشنر نے پارک کنٹریکٹر عمران کو پوچھ گچھ کے لیے اپنے دفتر طلب کیا تھا، تاہم انھوں نے خود آنے کی بجائے اپنے وکلا کو بھیج دیا۔

ذرائع کے مطابق وکلا نے دفتر میں پیش ہو کر ڈپٹی کمشنر سے مطالبہ کیا کہ جو پوچھ گچھ کرنی ہے وہ پارک کنٹریکٹر کی بجائے ان سے کی جائے۔

ڈی سی نے وکیلوں کو جواب دیتے ہوئے کہا کہ ہمیں جو پوچھ گچھ کرنی ہے وہ کنٹریکٹر سے کرنی ہے، ان سے کہیں کہ ڈی سی آفس میں حاضر ہوں۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ ڈپٹی کمشنر ایسٹ نے کنٹریکٹر سے پوچھ گچھ کے لیے ایک سوال نامہ بھی تیار کرلیا ہے، جس میں جھولوں کی در آمد، اسمبلنگ اور مین ٹیننس وغیرہ کے سوال شامل ہیں۔

پارک سانحہ: گورنرسندھ نے نوٹس لے لیا، انتظامیہ کے دو افراد زیرحراست

واضح رہے کہ سانحے کے فوراً بعد سندھ حکومت کی جانب سے ڈپٹی کمشنر ایسٹ کی سربراہی میں تحقیقاتی کمیٹی قائم کی گئی، چیف سیکریٹری سندھ اعظم سلیمان نے 24 گھنٹے میں رپورٹ تیار کرنے کی ہدایت کی تھی۔

خیال رہے کہ جھولا گرنے کے حادثے میں ایک دس سالہ بچی کشف ولد عبد الصمد جاں بحق اور اٹھارہ سے زائد افراد زخمی ہوگئے تھے، حادثے کی وجوہ کا تا حال تعین نہیں کیا جا سکا ہے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں