متنازع مردم شماری شفاف انتخابات کے خلاف ہے، فروغ نسیم farogh naseem
The news is by your side.

Advertisement

متنازع مردم شماری شفاف انتخابات کے خلاف ہے، فروغ نسیم

کراچی: سینئر قانون دان اور ایم کیو ایم (پاکستان) کے سینیٹر بیرسٹر فروغ نسیم کا کہنا ہے کہ حکومت نے اپنے مفاد کے لیے آئین میں ترمیم کی، متنازع مردم شماری شفاف الیکشن کے خلاف ہے۔

اے آر وائی کے پروگرام دی رپورٹرز میں میزبان عارف حمید بھٹی، سمیع ابراہیم اور صابر شاکر کی جانب سے پوچھے جانے والے سوال پر فروغ نسیم کا کہکنا تھا کہ آئین کے مطابق تازہ مردم شماری کے بعد الیکشن ہونے ضروری ہیں۔

اُن کا کہنا تھا کہ ’مردم شماری پر بعض جماعتوں کی جانب سے خدشات سامنے آئے ہیں ایسی صورتحال میں شفاف انتخابات ناگزیر ہوسکتے ہیں، قومی اسمبلی میں گزشتہ دنوں غلط بل منظور ہوا جسے سپریم کورٹ میں چیلنج کیا جاسکتا ہے‘۔

بیرسٹر فروغ نسیم کا کہنا تھا کہ ’حکومت نے اپنے مفاد کے لیے آئین میں ترمیم کردی، اگر پارلیمانی جماعتیں سمجھوتا کرلیں تو اسے جمہوریت نہیں کہا جاسکتا، عدالتیں آئینی ترمیم کو کالعدم قرار دینے کا حق رکھتی ہیں‘۔

مسلم لیگ ن کی جانب سے اداروں پر تنقید کرنے کے حوالے سے آنے والے بیانات پر بیرسٹر فروغ نسیم کا کہنا تھا کہ ’مریم نواز بتائیں کس ادارے کے کس آدمی کو اُن سے بغض ہے؟‘۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں