The news is by your side.

Advertisement

رابطہ کمیٹی نے متحدہ اپوزیشن سے ایم کیو ایم معاہدے کی توثیق کر دی

کراچی: رابطہ کمیٹی نے متحدہ اپوزیشن سے ایم کیو ایم معاہدے کی توثیق کر دی۔

ذرائع کے مطابق ایم کیو ایم رابطہ کمیٹی نے متحدہ اپوزیشن سے معاہدے کی توثیق کر دی ہے، رابطہ کمیٹی نے خالد مقبول صدیقی کو ہر فیصلے کا اختیار بھی دے دیا ہے۔

رابطہ کمیٹی نے حکومت سے علیحدگی کے فیصلے اور اپوزیشن کے ساتھ جانے کے فیصلے کی بھی توثیق کی ہے، ذرائع کا کہنا ہے کہ اس سلسلے میں تمام اراکین سے فرداً فرداً رائے طلب کی گئی تھی، اور انھوں نے متفقہ طور پر حمایت کا فیصلہ کیا۔

ایم کیوایم اور اپوزیشن کے درمیان کیا معاہدہ ہوا؟ مندرجات سامنے آگئے

واضح رہے کہ متحدہ قومی موومنٹ اور اپوزیشن کے درمیان معاہدہ طے پا گیا ہے، جس کے مندرجات اے آر وائی نیوز سامنے لے آیا، اس معاہدے پر خالد مقبول صدیقی، بلاول بھٹو، شہباز شریف، مولانا فضل الرحمان، اختر مینگل، اور خالد مگسی نے دستخط کیے ہیں، ذرائع کا کہنا ہے کہ معاہدے کے تحت ایم کیو ایم وفاقی کابینہ سے علیحدگی اختیار کرے گی، اور سندھ حکومت ایک ماہ میں بلدیاتی قانون میں ترامیم کا مسودہ سندھ اسمبلی میں پیش کرے گی۔

معاہدے کے تحت بلدیاتی قانون کو آئین کے آرٹیکل 140 اے کے مطابق بنایا جائے گا، سندھ میں جعلی ڈومیسائل کے اجرا کے لیے قانون سازی کی جائے گی، ایڈمنسٹریٹر بلدیہ عظمی کراچی مرتضیٰ وہاب اپنے عہدے سے مستعفی ہوں گے، بلدیاتی اداروں کے اختیارات میں اضافہ کیا جائے گا، حیدر آباد کراچی میں بلدیاتی کونسلز میں ایڈمنسٹریٹر کا تقرر مشاورت سے ہوگا۔

واضح رہے کہ ایم کیو ایم پاکستان اور متحدہ اپوزیشن آج 4 بجے مشترکہ پریس کانفرنس کریں گے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں