site
stats
اہم ترین

لیفٹیننٹ جنرل نوید مختار ڈی جی آئی ایس آئی مقرر

راولپنڈی: آرمی چیف آف اسٹاف جنرل قمر باجوہ نے عسکری اداروں میں تبادلے و تقرریوں کا عمل مکمل کرتے ہوئے سابق کورکمانڈر کراچی لیفٹیننٹ جنرل نوید مختار کو آئی ایس آئی کا چیف مقرر کردیا۔

تفصیلات کے مطابق جنرل راحیل شریف کی مدتِ ملازمت مکمل ہونے کے بعد آرمی کی کمان سنبھالنے والے نئے آرمی چیف جنرل قمر باجوہ نے فوج میں اعلیٰ سطح پر تقرریوں و تبادلوں کا کام مکمل کرلیا۔

آرمی چیف آف اسٹاف نے سابق کورکمانڈر کراچی لیفٹیننٹ جنرل نوید مختار کو ڈی جی آئی ایس آئی کی ذمہ داریاں دینے کی منظوری دے دی جبکہ حال ہی میں میجر جنرل سے لیفٹیننٹ جنرل کے عہدے پر ترقی پانے والے سابق ڈی جی رینجرز سندھ بلال اکبر کو چیف آف جنرل اسٹاف تعینات کردیا گیا ہے۔

معروف تجزیہ نگار ارشد شریف کے مطابق آرمی چیف کی جانب سے نامزد کردہ نئی افسران کی تقرریوں کا سلسلہ مکمل ہوگیا ہے اور ان ناموں سے معلوم ہوتا ہے کہ جنرل راحیل شریف کی جانب سے اعلان کردہ آپریشن اور پالیسیوں کا تسلسل جاری رہے گا۔

بیورو چیف اسلام آباد صابر شاکر نے نئے ڈی جی آئی ایس آئی کی تقرری کو اچھی علامت قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ ’’پاک فوج کی جانب سے دہشت گردی اور کرپشن کے خلاف آپریشن اب مزید تیز ہوگا اور ملزمان کو کیفر کردار تک پہنچایا جائے گا‘‘۔


اسی سے متعلق ’’ پاک فوج میں اعلیٰ سطح پر تقرریاں و تبادلے ‘‘


قبل ازیں پاک فوج کے چیف نے 6 میجر جنرلز کو لیفٹیننٹ جنرلز کے عہدے پر ترقی دی گئی تھی جبکہ اعلیٰ سطح پر بھی تبادلے و تقرریاں  کی گئی ہیں، جس کے مطابق سابق ڈی جی آئی ایس آئی لیفٹیننٹ جنرل رضوان اختر کو صدر نیشنل ڈیفنس جبکہ لیفٹیننٹ جنرل بلال اکبر کو چیف آف جنرل اسٹاف تعینات کیا گیا ہے۔

پاک فوج میں نئی تقرریوں و تبادلوں کے بعد لیفٹننٹ جنرل عاصم باجوہ کو انسپیکٹر جنرل آرمز جی ایچ کیو، سابق کورکمانڈر پشاور جنرل ہدایت الرحمان کو آئی جی ٹریننگ اینڈ ایویلیشن، لیفٹننٹ جنرل ہمایوں عزیز کو آئی جی سی این ٹی، لیفٹننٹ جنرل قاضی اکرام کو چیف آف لاجسٹک مقرر کیا گیا ہے۔

علاوہ ازیں میجر جنرل سے لیفٹیننٹ جنرل بننے والے آئی جی ایف سی بلوچستان لیفٹیننٹ جنرل شیرافگن کو کورکمانڈر بہالپور‘ لیفٹیننٹ جنرل نعیم اشرف کو چیئرمین ایچ آئی ٹی جبکہ ترقی بانے والے لیفٹیننٹ جنرل محمد افضل بطور ڈی جی ایف ڈبلیو او کے عہدوں پر تعینات کیا گیا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top