The news is by your side.

Advertisement

’سب سے پہلے لاک ڈاؤن کے باوجود سندھ میں زیادہ اموات ہوئیں‘ : صوبائی حکومت پر کڑی تنقید

کراچی: وفاقی کابینہ کے اراکین نے کرونا اقدامات کو ناقص قرار دیتے ہوئے سندھ حکومت کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا۔ معاونِ خصوصی برائے اطلاعات فردوس عاشق اعوان کا کہنا تھا کہ سندھ نے سب سے پہلے لاک ڈاؤن کیا مگر اموات بھی وہیں زیادہ ہوئیں جبکہ وفاقی وزیر برائے بحری امور علی زیدی نے انکشاف کیا کہ راشن کی تقسیم کے پیسے عوام کے پاس پہنچنے کے بجائے بلاول ہاؤس پہنچتے ہیں۔

معاونِ خصوصی برائے اطلاعات اور تحریک انصاف کے رکن اسمبلی حلیم عادل شیخ نے مشترکہ پریس کانفرنس کی جس میں فردوس عاشق اعوان کہنا تھا کہ وزیراعظم نےاٹھارویں ترمیم کےتحت صوبوں کوفیصلوں کاحق دیا مگر سندھ نے وزیر اعظم کی آواز پر لبیک نہیں کیا اُس کے سوا تمام صوبوں نے وزیراعظم کی آوازپر لبیک کہا۔

فردوس عاشق اعوان کا کہنا تھا کہ خوف کاشکارعوام کولمبی لمبی پریس کانفرنس میں الجھایاجارہا ہے، سندھ نےسب سےپہلےلاک ڈاؤن کیا، مگر سب سے زیادہ اموات بھی وہیں ہوئیں ہیں، اس کا مطلب حکومت جن اقدامات کا دعویٰ کررہے وہ کر نہیں رہی، وفاقی حکومت سندھ کے عوام کو بے یارومددگار نہیں چھوڑے گی۔

وفاقی وزیر برائے آبی وسائل فیصل واؤڈا کا کہنا تھا کہ وزیراعلیٰ سندھ نےآئینی اختیار کے مطابق فیصلہ کیا، اب ہمیں اُن کی تجربہ کاری کے نتائج کا انتظار ہے، کراچی کے علاقہ اندرون سندھ پربھی توجہ دینے کی ضرورت ہے کیونکہ وہاں کے حالات بہت زیادہ خراب ہیں، وزیراعلیٰ بارہ ارب کا حساب آج بھی نہ دے سکے۔

مزید پڑھیں: وزیراعلیٰ سندھ کا اگلے 14دن لاک ڈاؤن مزید سخت کرنے کا اعلان

وفاقی وزیر برائے بحری امور علی زیدی کا کہنا تھا کہ ’سندھ حکومت لوگوں کوبھوک سے مرنےسے بچانےمیں ناکام ہے، راشن تقسیم کے تمام پیسےکہاں گئے،کس کودیئے؟۔ انہوں نے الزام عائد کیا کہ راشن تقسیم کے پیسے عوام کے پاس نہیں پہنچتے مگر بلاول ہاؤس ضرور جاتے ہیں‘۔

علاوہ ازیں وفاقی وزیر مراد سعید نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر اپنے ایک ٹویٹ میں سندھ حکومت کو کڑی تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ ’ٹی وی اسکرین پر سندھ کے مناظر دکھائے جا رہے ہیں، وہاں کے عوام فاقہ کشی پر مجبور ہیں اور سندھ حکومت کے خلاف مسلسل احتجاج کررہے ہیں، ہم نے درخواست کی تھی مؤثر لاک ڈاون کی حکمت عملی اختیار کی جائے اور ضرورت مندوں کے گھروں کی دہلیز پر سہولتوں کی فراہمی کو یقینی بنائی جائے۔ مراد سعید نے سندھ حکومت سے مطالبہ کیا کہ خدارا بیانات سے نکل کر باہر آئیں اور انتظامات کریں۔

تحریک انصاف کے رہنما اور رکن سندھ اسمبلی حلیم عادل شیخ کا کہنا تھا کہ وزیراعلیٰ صاحب، پریس کانفرنس سے کچھ نہیں ہوگا بلکہ عوام کی حقیقت میں خدمت کریں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں