The news is by your side.

Advertisement

قومی اسمبلی اجلاس: اراکین کے لیے کرونا ٹیسٹ لازمی قرار

اجلاس کور کرنے والے میڈیا نمائندوں کا بھی کرونا ٹیسٹ لازمی قرار ، ہر ادارے سے ایک رپورٹر کو اجازت ہوگی

اسلام آباد: قومی اسمبلی کے اراکین کے لیے کرونا وائرس کا ٹیسٹ لازمی قرار دے دیا گیا ہے۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق قومی اسمبلی کا اجلاس آج ہوگا، اراکین اسمبلی کے لیے کرونا ٹیسٹ لازمی قرار دے دیا گیا، اراکین سینی ٹائزر گیٹ سے گزر کر پارلیمنٹ ہاؤس میں داخل ہوں گے۔

پارلیمنٹ ہاؤس کے گیٹ نمبر 5 پر تھرمامیٹر اور سینی ٹائزنگ گیٹ بھی نصب کر دیے گئے ہیں، اجلاس کور کرنے والے میڈیا نمائندوں کا بھی کرونا ٹیسٹ لازمی قرار دیا گیا ہے، میڈیا نمائندگان اور ملازمین کا داخلہ گیٹ نمبر 5 سے ہوگا۔

میڈیا نمائندوں کا کرونا ٹیسٹ پارلیمنٹ ہاؤس کی ڈسپنسری میں ہوگا، ہر ادارے سے صرف ایک رپورٹر کو اجلاس کور کرنے کی اجازت ہوگی، جب کہ پارلیمنٹ ہاؤس میں نجی کیمروں کے داخلے پر پابندی ہوگی۔

قومی اسمبلی کے 2 اراکین میں کروناوائرس کی تصدیق

اراکین کا پارلیمنٹ ہاؤس میں داخلہ گیٹ نمبر ایک سے ہوگا، قومی اسمبلی اجلاس کی کارروائی صرف 2 گھنٹے پر مشتمل ہوگی، آج پہلے دن صرف کرونا کی صورت حال اور حکومتی اقدامات پر بحث ہوگی۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز قومی اسمبلی کے اراکین محمود شاہ اور گل ظفر خان کا کرونا ٹیسٹ بھی مثبت آ گیا تھا، اراکین پارلیمنٹ سے ٹیسٹ کے لیے سیمپلز 8 مئی کو لیے گئے تھے۔ پارلیمنٹ لاجز کے ایک اور چیمبر اٹینڈنٹ میں کرونا کی تصدیق بھی ہو گئی ہے جس کے بعد پارلیمنٹ لاجز سے سامنے آنے والے کیسز کی تعداد 3 ہو گئی۔ اس سے قبل اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر بھی کرونا وائرس کا شکار ہو گئے تھے۔

اب تک اراکین پارلیمان میں سے سینیٹر راجہ ظفر الحق، مشاہد حسین سید، غلام سرور خان، سید فخر امام، مصطفی نواز کھوکھر، شاہ زین بگٹی، نور عالم خان، سینیٹر سلیم ضیا، ستارہ ایاز، ملیکہ بخاری، ڈاکٹر عائشہ غوث پاشا، طاہرہ اورنگ زیب، معاونین خصوصی علی نواز اعوان، ملک امین اسلم، مریم اورنگ زیب اور مائزہ حمید کے کرونا ٹیسٹ منفی آ چکے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں