The news is by your side.

Advertisement

تنخواہ سے محروم طبی عملے کا دھرنا : ویکسی نیشن کا عمل تاحال معطل

کراچی کے سب سے بڑے ویکسینیشن مرکز ایکسپو سینٹر اور ڈاو یونیورسٹی میں طبی عملے کی ہڑتال کے باعث ویکسی نیشن کا عمل معطل ہے۔

ویکسی نیٹرز نے ڈی ایچ اوایسٹ کے دفتر کے باہر دھرنا دیا ہوا ہے، مظاہرین کا کہنا ہے کہ گزشتہ کئی ماہ سے حکومت ہمیں تنخواہیں ادا نہیں کر رہی۔

تنخواہوں سے محروم ویکسی نیٹرز کے احتجاج کے دوسرا مرحلے میں پی آئی بی کالونی میں واقع کے ایم سی اسپتال کے باہر احتجاج جاری ہے۔

گذشتہ 9ماہ سے تنخواہوں کی عدم فراہمی کیخلاف احتجاج کے باعث کراچی ایکسپو سینٹر مکمل طور پر ویکسی نیشن کے حوالے سے غیر فعال ہوگیا ہے۔

ویکسی نیٹرز کے احتجاج کا آج گیارواں دن ہے، ویکسی نیٹرز نے ڈی ایچ او آفس کے مرکزی دفتر کے سامنے راستہ بند کرکے احتجاجی مظاہرہ کررہے ہیں۔

ملازمین کا کہنا ہے کہ ایکسپو سینٹر کی انتظامیہ تنخواہوں کی ادئیگی کیلئے تیار نہیں ہے، تنخواہوں کے حصول تک احتجاج جاری رکھیں گے۔

مظاہرے اور احتجاج کے باعث ایکسپو سینٹر میں کورونا ویکسینیشن کے خواہش مند شہری وائرس کی روک تھام کیلئے ویکسین سے محروم ہیں۔ شہریوں کی بڑی تعداد کو ہڑتال کے باعث پریشانی کا سامنا ہے۔

عوام کا کہنا ہے کہ بڑھتے ہوئے کورونا کیسز کی روک تھام کیلئے ویکسینیشن ضروری قرار دی جارہی ہے۔ طبی عملہ ہڑتال کے باعث ویکسین لگانے سے انکاری ہے، حکومت تنخواہوں کی ادائیگی فوری یقینی بنائے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں