The news is by your side.

Advertisement

کورونا ویکسین سے محروم ممالک کیلئے عالمی ادارۂ صحت کا اہم بیان

عالمی ادارۂ صحت نے کہا ہے کہ جن ملکوں میں عوام کی بڑی تعداد کو ویکسین لگ چکی ہے، انہیں مزید خوراک (بوسٹر شاٹس) حاصل کرنےکے لیے آرڈر نہیں دینے چاہئیں کیونکہ اِس وقت دنیا کے کئی ممالک کو کووِیڈ-19 ویکسین سرے سے نہیں ملی۔

بوسٹر شاٹ کا مطلب ہے مکمل ویکسین لگوانے کے بعد ایک ڈوز مزید لگوانا ہے، اس توقع کے ساتھ کہ اس سے قوتِ مدافعت میں اضافہ ہوگا اور کرونا وائرس کے نت نئے ویرینٹس کے خلاف تحفظ ملے گا۔

ڈائریکٹر جنرل ٹیڈروس ایڈانوم گیبریسوس نے کہا کہ کووِڈ-19 کی وبا سے اموات ایک مرتبہ پھر بڑھ رہی ہیں، ڈیلٹا ویرینٹ تیزی سے پھیل رہا ہے اور کئی ممالک ایسے ہیں جنہیں ابھی اپنے صحت کے شعبے سے وابستہ افراد کے لیے بھی ویکسین نہیں ملی۔

ٹیڈروس نے کہا کہ “کووِڈ-19 ویکسین سپلائی ناہموار اور عدم مساوات کی شکار ہے، چند ممالک تو لاکھوں بوسٹر ڈوز منگوا رہے ہیں جبکہ دیگر ممالک ابھی تک اپنے صحت کے شعبے سے وابستہ اور زد پر موجود آبادی کو بھی ویکسین نہیں لگوا پائے۔

انہوں نے کہا کہ ویکسین بنانے والے ادارے فائزر اور ماڈرنا ان ممالک کو بوسٹر شاٹس دے رہے ہیں جہاں پہلے ہی ویکسینیشن کی شرح بہت زیادہ ہے حالانکہ انہیں کوویکس کے لیے ڈوز فراہم کرنے چاہئیں، جو درمیانی آمدنی رکھنے والے اور غریبوں ملکوں کے لیے ایک ویکسین شیئرنگ پروگرام ہے اب ترجیح ان لوگوں کو ملنی چاہیے جنہیں ویکسین کا کوئی ڈوز نہیں ملا۔

میں آپ سے پوچھتا ہوں کہ عملے کو حفاظتی ساز و سامان کے بغیر آگ بجھانے کے لیے کون بھیجتا ہے؟ اس وقت کووِڈ-19 کے لپکتے شعلوں کی زد میں سب سے زیادہ کون ہے؟ صحت کے شعبے سے وابستہ وہ عملہ جو صفِ اول میں کام کر رہا ہے اور بزرگ شہری۔

عالمی ادارۂ صحت کی اہم سائنس دان سومیا سوامی ناتھ کہتی ہیں کہ عالمی ادارۂ صحت کو ابھی تک ایسا ثبوت نہیں ملا کہ ویکسین کا کورس مکمل کرنے کے بعد بوسٹر شاٹ لگوانے کا کوئی فائدہ بھی ہے۔ ہو سکتا ہے کہ آئندہ کسی وقت یہ فائدہ مند ثابت ہو، لیکن فی الحال ایسا کوئی ثبوت موجود نہیں۔

انہوں نے کہا کہ اس بات کا فیصلہ سائنس اور ڈیٹا کرے گا، کوئی کمپنی نہیں کہ آپ کو بوسٹر ڈوز لگوانے کی ضرورت ہے بھی یا نہیں۔

ادارے کے سربراہ برائے ایمرجنسی پروگرامز مائیک راین کہتے ہیں کہ اگر ملکوں نے قیمتی ویکسین محض بوسٹر شاٹس پر ضائع کر دیں تو مستقبل میں سر جھکا کر اور شرم سے ماضی کی طرف دیکھنا پڑے گا کیونکہ اس وقت اس ویکسین کی ضرورت دنیا بھر کے ان لوگوں کو ہے، جو کووِڈ-19 کے ہاتھوں مر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ “یہ وہ لوگ ہیں جو اپنا کیک حاصل کرنا اور کھانا چاہتے ہیں اور پھر انہیں مزید کیک کی طلب ہو رہی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں