The news is by your side.

Advertisement

کورونا نے ایک پھر انٹری دے دی، 1لاکھ 74 ہزار مریضوں کا انکشاف

پیانگ یانگ : کورونا وائرس کی عالمی وبا نے دنیا کے مختلف ممالک میں ایک بار پھر سر اٹھانا شروع کردیا جس کے سبب معاشی پریشانی کے پیش نظر حکومتوں میں تشویش کی لہر دوڑ گئی ہے۔

اس حوالے سے خبر ہے کہ شمالی کوریا نے ملک میں کورونا وائرس کی وبا پہلی بار پھیلنے کا اعتراف کرنے کے بعد جمعہ کے روز ملک میں اکیس نئی ہلاکتوں اور مزید ایک لاکھ 74 ہزار400 افراد میں وائرس کی علامات ظاہر ہونے کی تصدیق کی ہے۔

حکمران ورکرز پارٹی کے اخبار رودونگ سنمن نے میڈیا کو بتایا ہے کہ رہنما کم جونگ اُن کو ہفتے کے روز اس متعدی مرض سے متعلق تفصیلات بتائی گئیں۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ اپریل کے اواخر سے جمعہ تک بخار کی علامات والے افراد کی تعداد پانچ لاکھ 24 ہزار چار سو ہوچکی ہے۔ شمالی کوریا کی آبادی، دو کروڑ ستاون لاکھ اسی ہزار کے قریب ہے۔

اخبار کے مطابق دو لاکھ اسی ہزار سے زائد افراد زیرعلاج ہیں اور ستائیس کا انتقال ہو چکا ہے، جمعہ کو ملک میں بخار کی علامات والے کیسوں کی یومیہ تعداد جمعرات کی نسبت نو گنا سے تجاوز کر چکی تھی۔

اجلاس میں جناب کم نے صورت حال کو ملک بننے کے بعد ایک عظیم بحران قرار دیتے ہوئے فوری نوعیت کی ہنگامی تشویش کا اظہار کیا۔

انہوں نے کہا کہ ترقی یافتہ ممالک میں لاگو کردہ انسداد وائرس اقدامات کا جائزہ لینا انتہائی ضروری ہے۔ انہوں نے حکام کو چین کے مؤثر تر نتائج سے سیکھنے اور اقدامات میں تیزی لانے کی ہدایات دیں۔

شمالی کوریا نے اپنے ملک میں کورونا وائرس کے پہلے متاثرین کی جمعرات کو باضابطہ تصدیق کی تھی اور کہا تھا کہ وہ انسداد وبا کے اپنے نظام کو انتہائی ہنگامی درجے تک بڑھا دے گا، جناب کم نے تمام شہروں اور کاؤنٹیوں کو لاک ڈاؤن کا حکم دیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں