The news is by your side.

Advertisement

کورونا وائرس علامات ظاہر نہ ہونے کے باوجود منتقل ہوجاتا ہے

اس وقت دنيا بھر میں کورونا وائرس کے بارے میں معلومات کا سیلاب رواں ہے، کووڈ انیس کا سبب بننے والے اس مہلک وائرس کا خوف لوگوں میں بڑھتا جارہا ہے، اس کے سدباب کیلئے سائنسدان دن رات کوششوں میں مصروف ہیں۔

سائنسدانوں نے تصدیق کی ہے کہ کورونا وائرس علامات ظاہر کیے بغیر بھی متاثرہ فرد سے دوسروں میں منتقل ہوسکتا ہے۔
اور اس حقیقت کے نیتجے میں اس کے پھیلاﺅ کی روک تھام زیادہ بڑا چیلنج ثابت ہوگی۔

ووہان کی 20 سالہ لڑکی نے خاندان کے پانچ افراد میں اس وائرس کو منتقل کیا جبکہ وہ خود جسمانی طور پر کبھی بیمار نہیں ہوئی تھی۔

کورونا وائرس کو پھیلنے سے روکنے کے لیے یورپی ملک نے دنیا کے کسی بھی ملک کے مقابلے میں آبادی کے زیادہ بڑے حصے کو ٹیسٹ کرنے کے بعد دریافت کیا کہ 50 فیصد مریضوں میں کورونا وائرس سے ہونے والی بیماری کووڈ 19 میں کوئی علامات ظاہر نہیں ہوئی تھیں۔

گزشتہ ماہ عالمی ادارہ صحت اور چین کے مشترکہ مشن نے ایسے انفیکشنز کی شرح نہ ہونے کے برابر اور وائرس کے پھیلاؤ کا غیراہم ذریعہ قرار دیا تھا۔

مختلف تحقیقی رپورٹس میں بھی عندیہ دیا گیا ہے کہ کورونا وائرس اس وقت بھی ایک سے دوسرے انسان میں منتقل ہوسکتا ہے، جب مریض میں اس کی علامات ظاہر نہیں ہوئی ہوتی۔

جاپان میں ایک تحقیق کے دوران دریافت کیا گیا کہ حال ہی میں وائرس سے متاثر ہونے والا مریض دوسرے فرد میں اس انفیکشن کو5 دن کے اندر  ہی منتقل کرسکتا ہے جو کہ اس وائرس کی علامات ظاہر ہونے کی مدت سے کم ہے۔

اس کے علاوہ چین میں رپورٹ ہونے والے تمام کیسز کا تجزیہ کرتے ہوئے دریافت کیا گیا کہ1.2 فیصد افراد میں علامات ظاہر ہوئے بغیر کورونا وائرس کی تصدیق ہوئی۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں