The news is by your side.

Advertisement

کرونا وائرس کا لیب سے اخراج، جرمن ماہر کا اہم بیان

برلن: ایک جرمن وائرلوجسٹ نے کہا ہے کہ کرونا وائرس کا لیبارٹری سے اخراج سے متعلق نظریہ ایک انتہائی انہونی بات ہے۔

تفصیلات کے مطابق بائیولوجی کے جرمن پروفیسر تھامس سی میٹنلیٹر نے کرونا وائرس کے لیبارٹری سے اخراج کا نظریہ انتہائی انہونی قرار دے دیا ہے، انھوں نے مقامی میڈیا کو انٹرویو میں کہا کہ انتہائی سیکیورٹی والی لیبارٹریز میں خصوصی جامع تحفظ والی ٹیکنالوجی موجود ہوتی ہے۔

جرمنی کے جانوروں کی صحت سے متعلق وفاقی تحقیقاتی ادارے فریڈرک لوفلر انسٹیٹیوٹ کے سربراہ نے کہا کہ لیبارٹریز میں جامع تحفظ والی ٹیکنالوجیز پر مبنی اقدامات کا دنیا بھر میں ایک معیار قائم رکھا جاتا ہے۔

کرونا وائرس کے ماخذ کی تلاش، جاپانی میڈیا کی انگلی امریکا کی طرف اٹھ گئی

تاہم میٹنلیٹر کا یہ بھی کہنا تھا کہ تمام تر حفاظتی اقدامات کے باوجود درحقیقت انسانی عنصر بھی موجود ہوتا ہے، اور سادہ سی بات ہے کہ غلطیاں ہو سکتی ہیں۔

جرمن ماہر نے کہا ہم نہیں جانتے کہ یہ بیماری پھیلانے والا جرثومہ کہاں سے آیا ہے، لیکن مجھے یقین نہیں ہے کہ اس جرثومے میں جان بوجھ کر تبدیلی آئی ہے، لیکن میں اس قیاس کو 100 فی صد مسترد بھی نہیں کر سکتا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں