The news is by your side.

Advertisement

کرونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کیلئے ایران کا بڑا فیصلہ

تہران : ایران نے ملک میں تیزی سے پھیلتے ہوئے ہلاکت خیز کرونا وائرس کے پیش نظر 80 ہزارقیدیوں کوعارضی طور پر رہا کرنے کا فیصلہ کرلیا، رہائی پانے والوں میں سیاسی قیدی بھی شامل ہیں۔

تفصیلات کے مطابق ایران میں کرونا وائرس کے ہاتھوں اموات کی تعداد تیزی سے بڑھتی جا رہی ہے، کورونا وائرس سے ایران میں ہلاکتوں کی تعداد 853 ہوگئی ہے، جس میں سے 129 افراد گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ہلاک ہوئے جبکہ متاثرہ افراد کی تعداد 14 ہزار تک پہنچ گئی ہے۔

برطانوی میڈیا کا کہنا ہے کہ ایران نے 85 ہزار قیدیوں کوعارضی طورپررہا کرنے کافیصلہ کرلیا ہے ، رہائی پانے والوں میں سیاسی قیدی بھی شامل ہیں، قیدیوں کی رہائی کا فیصلہ کرونا کا پھیلاؤروکنے کے لئے کیا گیا ہے۔

مزید پڑھیں : ایران میں کورونا وائرس سے مذہبی رہنما انتقال کر گئے

گذشتہ روز کروناوائرس سےایران میں سپریم لیڈر مقرر کرنے والی مجلس ماہرین کے رکن آیت اللہ ہاشم بطحای انتقال کر گئے تھے، 78 سالہ آیت اللہ ہاشم بطحای میں دو روز قبل کورونا وائرس کی تشخیص ہوئی تھی اور کورونا وائرس کا ٹیسٹ مثبت آنے پر انہیں اسپتال میں داخل کیا گیا تھا۔

آیت اللہ ہاشم بطحای ماہرین کی مجلس میں تہران کی نمائندگی کی جب کہ وہ رہنمائے اعلیٰ یعنی سپریم لیڈر کی تقرری کے لیے تشکیل کردہ 88 رکنی مضبوط مذہبی مجلس کے رکن بھی تھے۔

یاد رہے عدلیہ کے سربراہ ابراہیم رئیسی نے بتایا تھا کہ اب تک قریباً 70 ہزار قیدیوں کو عارضی طور پر رہا کیا گیا ہے تاہم انہوں نے یہ نہیں بتایا کہ رہائی پانے والے افراد کو واپس جیل میں کب ڈالا جائے گا۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں