The news is by your side.

Advertisement

کرونا وائرس خدشات، سارک ویڈیو کانفرنس میں پاکستان نے مسئلہ کشمیر اٹھا دیا

اسلام آباد: دفتر خارجہ کی ترجمان عائشہ فاروق نے تصدیق کی ہے کہ کرونا وائرس کے پھیلاؤ اور تدارک کے لیے ہونے والی سارک ویڈیو کانفرنس میں معاونِ خصوصی برائے صحت ڈاکٹر ظفر مرزا نے پاکستان کی نمائندگی کرتے ہوئے مسئلہ کشمیر کو اجاگر کیا۔

اے آر وائی نیوز کی رپورٹ کے مطابق جنوبی ایشیا میں کرونا وائرس کے خطرے کے پیش نظر سارک کانفرنس کے ممالک کی ویڈیو کانفرنس طلب کی جس میں پاکستان کی نمائندگی ڈاکٹر ظفر مرزا نے کی۔

دفتر خارجہ کی ترجمان کے مطابق ڈاکٹر ظفر مرزا نے پاکستان کی جانب سے کرونا وائرس کے لیے اٹھائے جانے والے اقدامات اور روک تھام  کے حوالے سے سارک ممالک کے اراکین کو آگاہ کیا۔

ترجمان دفتر خارجہ کے مطابق پاکستان کرونا کا پھیلاؤ روکنےکیلئے روزِ اول سے اقدامات کر رہا ہے، عالمی ادارہ صحت نے بھی بھرپور حکمت عملی کی تعریف کی اور اقدامات کو سراہا۔

مزید پڑھیں: کرونا وائرس کے معاملے پر پاکستان کی بڑی فتح، مودی سارک کانفرنس بلانے پر رضا مند

پاکستان نے سارک کے رکن ممالک کو تجویز دی کہ وہ بیرونِ ملک سے آنے والے تمام مسافروں کی اسکریننگ کےعمل کو ادارہ جاتی بنائیں، جس طرح وائرس سے نمٹنے کے لیے چین نے اقدامات کیے تمام ممالک کو اُسی طرز پر اقدامات کرنا ہوں گے۔  پاکستان نےسارک ممالک کے وزرا صحت کی کانفرنس دوبارہ بلانےکی تجویز بھی دی۔

ڈاکٹر ظفر مرزا کا کانفرنس میں اظہار خیال

معاونِ خصوصی برائے صحت ڈاکٹر ظفر مرزا نے ویڈیو خطاب میں مودی اور سارک کے دیگرسربراہان کا ضمیرجھنجھوڑا اور بتایا کہ دنیا اب لاک ڈاؤن پر پریشان ہورہی ہے جبکہ کشمیریوں کو گزشتہ سات ماہ سے ایسی صورت حال کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔

انہوں نے مطالبہ کیا کہ کشمیریوں کی اطلاعات تک رسائی یقینی بنائی جائے،  کروناسے تحفظ کیلئےدرست اور ضروری اطلاعات فراہم کرنا کشمیریوں کا بنیادی حق ہے، مقبوضہ کشمیر کے عوام کو کرونا وائرس سے متعلق حفاظتی سامان اور ادویات پہنچنا بہت ضروری ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: سندھ میں کورونا وائرس کے مزید 13 کیسز رپورٹ

اُن کا کہنا تھا کہ کشمیریوں کو خوراک و دیگرضروری سامان کی فراہمی یقینی بنائی جائے، مقبوضہ کشمیرکے عوام کو بلاتعطل طبی سہولیات فراہم کی جائیں، بھارت مقبوضہ کشمیر میں مواصلاتی لاک ڈاؤن کو فوری ختم کرے اور اطلاعات کی ترسیل پر عائد کی جانے والی پابندیاں ختم کرے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں