The news is by your side.

Advertisement

کرونا وائرس ، حاضری کے لیے بائیومیٹرک نظام میں تبدیلی کا فیصلہ

کراچی : سندھ ہائی کورٹ نے حاضری کے لیے بائیومیٹرک نظام میں تبدیلی کا فیصلہ کرتے ہوئے تمام ملازمین کو بائیومیٹرک نظام میں چہروں سے شناخت کرنےکی ہدایت کردی ہے۔

تفصیلات کے مطابق کرونا وائرس سے بچاؤ کے لیے حفاظتی اقدامات کرتے ہوئے سندھ ہائی کورٹ سمیت تمام عدالتوں میں حاضری کے لیے بائیومیٹرک نظام میں تبدیلی کا فیصلہ کیا گیا اور تمام ملازمین کوبائیومیٹرک نظام میں چہروں سے شناخت کرنے کی ہدایت کردی ہے۔

سندھ ہائی کورٹ کی جانب سے  بائیومیٹرک نظام میں تبدیلی کا نوٹی فکیشن بھی جاری کردیا،  نوٹی فکیشن کا اطلاق پورے صوبے کی عدالتوں پر ہوگا۔

دوسری جانب لاہور ہائی کورٹ کے بعد ماتحت عدالتوں میں بھی بائیو میٹرک حاضری لگانے سے اسٹاف کو روک دیا گیا ہے اور چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ کی منظوری کے بعد رجسٹرار کی جانب سے بائیو میٹرک حاضری نہ لگانے کا مراسلہ بھی جاری کردیا ہے۔

جس میں کہا گیا ہے کہ کرونا وائرس سے بچاؤ کے لیے حفاظتی اقدامات کے پیش نظر تمام ڈسٹرکٹس کورٹ میں عدالتی عملہ پرانی پریکٹس کے مطابق رجسٹر پر حاضری لگائے گا ، رجسٹر پر حاضری عارضی طور پر لگائی جائیں گی۔

مزید پڑھیں :  وفاقی دارالحکومت کے شہری دفاتر میں بائیومیٹرک حاضری پرپابندی عائد 

یاد رہےوفاقی دارالحکومت کی ضلعی انتظامیہ نے کرونا وائرس سےمتعلق ہدایت نامہ جاری کیا تھا ، جس میں کہا گیا تھا شہری ادارے کرونا وائرس کا پھیلاؤ روکنے کیلئے اقدامات کریں۔

ہدایت نامے میں کہا گیا تھا  کرونا وائرس وائرل انفیکشن ہے، جو متاثرہ شخص سےدوسرےکومنتقل ہو سکتاہے، غیرضروری باہر نکلنے،بھیڑ میں جانےسےگریز کیا جائے۔

ہدایت نامے میں کہا گیا تھا وفاقی دارالحکومت کے شہری دفاتر میں بائیومیٹرک حاضری پرپابندی عائد ہے، دروازوں کی چٹنی، ہینڈل، پن پر کرونا وائرس موجود ہوسکتاہے، کمپیوٹر کے ماؤس، کی بورڈ پر کرونا وائرس موجود ہو سکتا ہے، کمپیوٹر آپریٹر گلوز دوران ڈیوٹی گلوز کا استعمال کریں۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں