The news is by your side.

Advertisement

امریکا میں انسان پر اینٹی کورونا وائرس ویکسین کا تجربہ

واشنگٹن: دنیا بھر میں تیزی سے پھیلتے ہلاکت خیز کورونا وائرس سے بچاؤ کے لیے امریکامیں انسان پر اینٹی کورونا وائرس ویکسین کا تجربہ کیا گیا ہے۔

بین الاقوامی میڈیا رپورٹس کے مطابق امریکی شہر سیٹل کی کیسر پرمانینتے ریسرچ میں پہلی بار خاتون پر انسداد کوروناوائرس ویکسین کا تجربہ کیا گیا۔

ویکسین کےلیےخاتون نےخود کو رضاکارانہ طورپرپیش کیا ہے اور یہ ویکسین مجموعی طور پر45 افراد کو دی جائےگی۔

امریکی ریسرچ انسٹی ٹیوٹ کا کہنا ہے کہ تجربےکی کامیابی کا انتظار ہے اور اگر یہ تجربہ کامیاب ہوتا ہے تو ویکسین کی بڑےپیمانےپرتیاری میں ڈیڑھ سال لگ سکتاہے۔

یہ ویکسین کوویڈ 19 کا سبب نہیں بن سکتی لیکن اس میں بے ضرر جینیاتی کوڈ کی ایک کاپی موجود ہے جو کہ وائرس سے لیا گیا ہے۔

دنیا بھر میں سائنسدان کورونا وائرس سے لڑنے والی ویکسین کی تیاری کے لیے بڑے پیمانے پر ریسرچ کررہے ہیں۔

اس حوالے سے امپیرل کالج لندن کے ڈاکٹر جان ٹریگائنگ جوکہ انفیکشن ڈیزیز کے ماہر ہیں، کا کہنا ہے کہ یہ ویکسین پہلے سے موجود ٹیکلنالوجی کا استعمال کرتے ہوئے اعلیٰ معیار کے مطابق تیار کی جاتی ہیں، جسے ہم جانتے ہیں کہ وہ انسانوں کے لیے محفوظ ہیں اور تجربے کے دوران ان لوگوں کو گہرائی سے مانیٹر کیا جاتا ہے جن پر ویکسن آزمائی جاتی ہے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں