The news is by your side.

Advertisement

کراچی کور کمانڈر حملہ کیس کی سماعت‘ وکیل کے انتقال کے سبب ملتوی

کراچی: سندھ ہائی کورٹ میں کورکمانڈر حملہ کیس میں سزا یافتہ دہشت گردوں کی سزا کے خلاف اپیل کی سماعت ہوئی۔عدالت نے ملزمان کی وکیل کی عدم حاضری پر سماعت غیر معینہ تک ملتوی کردی۔

تفصیلات کےمطابق آج سندھ ہائی کورٹ نے دہشت گردوں کی جانب سے دائر کردہ اپیلوں پر آئندہ سماعت پر دلائل طلب کرلیے‘ آج کی سماعت دہشت گردوں کی وکیل کے انتقال کے باعث ملتوی کی گئی ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ پولیس نے عدالت کے روبرو بیان دیا ہے کہ مذکورہ دہشت گردوں نے 10جون 2004کو کلفٹن پل پر کور کمانڈر کراچی کے قافلے پر حملہ کیا تھا ۔حملے میں کورکمانڈراحسن سلیم حیات محفوظ رہے تھے جبکہ چھ جوان شہید ہوگئے تھے ۔ دہشت گردوں کے اس حملے میں نذیر احمد سمیت تین پولیس اہلکار بھی شہید ہوئے تھے۔

انسداددہشت گردی کی خصوصی عدالت نے کالعدم تنظیم  جند اللہ سے تعلق رکھنے والے دہشت گرد عطا الرحمان کو اس کے گیارہ ساتھیوں سمیت سزا ئے موت سنائی تھی۔ ملزمان میں عطاالرحمن، شہزاد باجوہ، دانش امام، یعقوب سعید خان، خرم سیف اللہ، عزیز احمد، نجیب اللہ، شہزاد مختار، راؤ خالد، شعیب صدیقی اور محمد خالد شامل ہیں۔

سنہ 2006 میں عدالت نے قتل کے الزام میں ملزمان کو سزائے موت، بم دھماکے کے الزام میں عمر قید اور جائیداد ضبط کرنے، کورکمانڈر پر حملے کے الزام میں چودہ سال قید اور پچاس ہزار جرمانہ اور عوامی املاک کو نقصان پہنچانے کے الزام میں ایک ایک لاکھ روپے جرمانے کی سزا سنائی تھی۔ یہ بھی کہا گیا تھا کہ  فیصلے کا اطلاق ہائیکورٹ کی توثیق کے بعد ہوگا۔

 

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں