site
stats
عالمی خبریں

کرپشن کا الزام ثابت: مصر کے سابق وزیر داخلہ کو 7 برس قید

قاہرہ: مصر کی عدالت نے حسنی مبارک کی رورہِ حکومت میں وزیرداخلہ کے عہدے پر تعینات حبیب العادلی کو 7 برس قید کی سزا سنادی۔

مصر کی میڈیا کے مطابق سابق وزیر داخلہ حبیب العادلی پر دورِ اقتدار میں عوامی فنڈز کی ہیر پھیر کرنے کا جرم ثابت ہونے پر انہیں 7 برس قید کی سزا سنائی گئی۔

عرب میڈیا کے مطابق عدالت نے العادلی کو 195 ملین مصری پاؤنڈز کی رقم واپس کرنے اور اتنی ہی رقم بطور جرمانہ ادا کرنے  اور اتنی ہی رقم بطور جرمانہ ادا کرنے کے احکامات جاری کیے ہیں۔

مصر کی عدالت نے حسنی مبارک کے دورہ حکومت میں رزیر داخلہ کے فرائض سرانجام دینے والے اعلیٰ عہدہداروں کو بھی جرم ثابت ہونے پر سات سات سال قید کی سزا سنائی ہے۔

یاد رہے کہ السیسی سابق صدر مبارک کی حکومت میں فوج کے خفیہ ادارے کے سربراہ تھےاور انہوں نے2013 میں جمہوری طریقے سے منتخب کردہ مبارک کے جانشین محمد مرسی کا تختہ الٹا تھا۔

واضح رہے2011 میں ہونے والے یہ پرتشدد مظاہرے 18 دن تک چلے جس میں800 کےقریب افراد ہلاک ہوئےجس کے باعث30 سال تک اقتدارپر قابض رہنے والے حسنی مبارک کوعہدہ چھوڑنا پڑاتھا۔

پڑھیں: ’’ مصری حکومت نے سابق صدر حسنی مبارک کو رہا کردیا ‘‘

بعد ازاں حسنی مبارک کو جرم ثابت نہ ہونے پر عدالت نے بے قصور قرار دیتے ہوئے رہا کرنے کا حکم دیا تھا جس کے بعد حکومت نے انہیں قید سے آزاد کردیا۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top