The news is by your side.

Advertisement

جمال خاشقجی کے قاتلوں نے کس ملک میں تربیت حاصل کی؟ امریکی اخبار کا دعویٰ

واشنگٹن: امریکی اخبار نے دعویٰ کیا ہے کہ سعودی صحافی جمال خاشقجی کے قاتلوں نے امریکا میں پیرا ملٹری ٹریننگ حاصل کی۔

تفصیلات کے مطابق نیویارک ٹائمز نے ایک رپورٹ میں دعویٰ کیا ہے کہ سعودی صحافی جمال خاشقجی کے قاتلوں نے امریکا میں پیرا ملٹری ٹریننگ حاصل کی تھی، یہ تربیت ٹیئر وَن گروپ نے دی، دفاعی نوعیت کی یہ تربیت سعودی رہنماؤں کی حفاظت کے لیے تھی۔

جمال خاشقجی کے قتل میں ملوث 4 سعودی شہریوں نے امریکی محکمہ خارجہ سے منظور شدہ معاہدے کے تحت قتل سے ایک سال قبل پیرا ملٹری ٹریننگ حاصل کی، قاتلوں کو سعودی رائل گارڈز کی تربیت کا لائسنس پہلی مرتبہ 2014 میں جاری کیا گیا تھا۔

تاہم اخبار کا کہنا ہے کہ کیا امریکی حکام اس آپریشن سے آگاہ تھے؟ اس سلسلے میں کوئی ثبوت نہیں ملا ہے۔

اس رپورٹ پر امریکی محکمہ خارجہ کے ترجمان نیڈ پرائس نے کہا کہ میڈیا رپورٹنگ میں کسی دفاعی برآمدی لائسنسنگ سرگرمی پر الزام پر قانون کے تحت محکمہ کوئی تبصرہ نہیں کر سکتا۔

نیڈ پرائس نے واضح کیا ہے کہ سعودی عرب کے بارے میں امریکی پالیسی یہ ہے کہ قانون کی حکمرانی کو ترجیح اور انسانی حقوق کا احترام ہو، تاہم انھوں نے بتایا کہ مذکورہ تربیت سابق امریکی صدر بارک اوباما کے دور میں شروع ہوئی اور ٹرمپ کے دور کے پہلے سال تک جاری رہی تھی۔

واضح رہے کہ جمال احمد خاشقجی سعودی عرب کے شہری اور صحافی تھے، وہ واشنگٹن پوسٹ کے لیے کالم لکھتے تھے، العرب نیوز چینل کے ایڈیٹر ان چیف بھی تھے، وہ مدینہ میں 1958 میں 13 اکتوبر کو پیدا ہوئے اور ترکی کے شہر استنبول کے سفارت خانے میں انھیں 2 اکتوبر 2018 کو قتل کیا گیا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں