The news is by your side.

Advertisement

میاں بیوی ویلنٹائن ڈے پر 3 ماہ کے لیے ہتھکڑیوں میں جکڑ گئے

خارکیف: یوکرین میں ایک جوڑے نے روز روز کے لڑائی جھگڑوں سے تنگ آ کر انوکھا قدم اٹھا لیا، دونوں نے خود کو تین ماہ کے لیے ہتھکڑیاں لگا دیں۔

تفصیلات کے مطابق یوکرین میں ایسے میاں بیوی کی تصاویر سامنے آئی ہیں، جنھیں دیکھ کر پہلی نظر میں ایسا لگتا ہے کہ کہ یہ جیل سے فرار قیدی ہوں گے، لیکن آپ کو یہ جان کر حیرت ہوگی کہ یہ لڑائی جھگڑے سے بے زار میاں بیوی ہیں، جنھوں نے جھگڑوں سے چھٹکارے کے لیے یہ عجیب ترکیب نکالی ہے۔

روز روز کی لڑائی سے تنگ آ کر الیگزینڈر کوڈلے اور ان کی بیوی وکٹوریا پسٹوویٹووا نے ویلنٹائن ڈے پر تین ماہ کے لیے خود کو ہتھکڑیوں میں جکڑ لیا، جوڑے کا یہ منفرد تجربہ سوشل میڈیا پر خوب وائرل ہو رہا ہے۔

رپورٹس کے مطابق 33 سالہ آن لائن کار سیلز مین الیگزینڈر اور 28 سالہ بیوٹیشن وکٹوریا خارکیف کے رہائشی ہیں، دونوں کے درمیان کچھ مسائل تھے جن کی وجہ سے ان کا رشتہ خطرے میں پڑ گیا تھا، اس پر انھوں نے فیصلہ کیا کہ آئندہ تین ماہ تک ہر لمحہ وہ ساتھ گزاریں گے، اور اس طرح اپنا رشتہ ٹوٹنے سے بچا لیں گے۔

معلوم ہوا کہ یہ آئیڈیا الیگزینڈر کا تھا، ایک دن وکٹوریا نے اس سے کہا کہ وہ اسے چھوڑنا چاہتی ہے، تو الیگزینڈر نے یہ آئیڈیا پیش کر دیا، جسے پہلے تو وکٹوریا نے مسترد کیا لیکن پھر مان گئی۔

الیگزینڈر نے بتایا کہ ابتدا میں تو بہت مشکل پیش آئی لیکن اب ہر گزرتے دن کے ساتھ ہم ہر لمحہ ایک ساتھ رہنے کی حالت کے ساتھ عادی ہوتے جا رہے ہیں، دراصل ہفتے میں ایک یا دو بار ہم رشتہ توڑنے کی باتیں کیا کرتے تھے، جب بھی وکٹوریا یہ کہتی تو میں جواب دیتا کہ میں تمھیں خود سے جوڑ لوں گا۔

الیگزینڈر کا کہنا تھا کہ اب تقریباً ایک ماہ سے ہمیں ہر کام ایک ساتھ کر کرنا پڑتا ہے، وکٹوریا نے بتایا کہ ہتھکڑیوں نے میری زندگی میں مجھے نئے جذبات سے آشنا کر دیا ہے۔

واضح رہے کہ اب یہ جوڑا سوشل میڈیا پر اپنی تصاویر پوسٹ کر رہا ہے، اور ایک دوسرے کو سمجھنے اور ایک دوسرے کے احترام کے حوالے سے دوسروں کو سبق بھی دے رہے ہیں، یہ جوڑا یوکرین کے ٹی وی پر ایک ٹاک شو میں بھی نمودار ہوا۔

الیگزینڈر نے دل چسپ بات یہ بتائی کہ ان کے درمیان لڑائی جھگڑا اب بھی ختم نہیں ہوا ہے، اور وہ اب بھی جھگڑتے ہیں، لیکن فرق یہ آیا ہے کہ جب ہمارا جھگڑا بند گلی میں داخل ہو جاتا ہے تو اب ہم صرف ایک دوسرے سے بات کرنا چھوڑ دیتے ہیں، پہلے ہم اپنا سامان باندھنے لگ جاتے تھے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں