site
stats
پاکستان

عدالت نے بیوی پر تیزاب پھینکنے والے شوہر کو سزا سنادی

لاہور : مقامي عدالت نے تيزاب پھینکنے کے مقدمے کا سات سال بعد فيصلہ جاري کرتے ہوئے مجرم کو سات سال قيد اور بيس ہزار روپے جرمانے کا حکم ديا ہے۔

تفصیلات کے مطابق لاہور کي رہائشی خاتون پر اس کے شوہر نے ناچاقی کی بناء پر تیزاب پھینک دیا تھا جس سے خاتون کا چہرہ اور ہاتھ بری جھلس گیا تھا اور وہ کئی عرصے تک زیر علاج رہنے کے بعد بھی صحت یاب نہیں ہو پائی ہے۔

مقامي عدالت کے جج کے رو برو مدعي خاتون کے وکيل نے عدالت کو بتايا کہ ملزم جاويد قادر نے گھريلو ناچاکي پر اپني بيوي کو گھر سے نکال ديا تھا، جس کے بعد سسرال جا کر بيوي پر تيزاب پھينک کر شدید زخمی کردیا تھا۔

عدالت میں خاتون کے وکیل نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ تیزاب کے باعث خاتون کا چہرہ اور ہاتھ جل گئے تھے اس لیے عدالت ملزم کو قرار واقعی سزا دے۔

عدالت نے دلائل اور گواہان کے بيانات کے بعد مجرم جاويد قادر کو سات سال قيد اور بيس ہزار روپے جرمانے کي سزا سنا دي، جرمانے کي عدم ادائيگي پر مجرم کو مزيد ايک ماہ قيد کي سزا بھگتنا ہو گي۔

مجرم جاويد قادر پر اگست دوہزار دس ميں اپني بيوي پر تيزاب پھينکنے کا مقدمہ درج ہوا تھا۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top