The news is by your side.

Advertisement

پی ٹی آئی لانگ مارچ کے دوران توڑپھوڑ:عمران خان کی 15 مقدمات میں ضمانت منظور

اسلام آباد : سیشن عدالت نے پی ٹی آئی مارچ کے دوران توڑپھوڑ کے15مختلف مقدمات میں سابق وزیر اعظم عمران خان کی عبوری ضمانت منظور کرلی۔

تفصیلات کے مطابق پی ٹی آئی لانگ مارچ کے دوران توڑپھوڑ کے مقدمات کے معاملے پر سابق وزیراعظم عمران خان نے ضمانت قبل ازگرفتاری کیلئے درخواست دائر کردی ، عمران خان نے 10 مقدمات میں ضمانت کیلئےعدالت سے رجوع کیا۔

چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان ڈسٹرکٹ سیشن عدالت پہنچے، اس موقع پر اسد عمر، علی نواز اعوان،شہباز گل اور دیگر پارٹی رہنماء بھی ضلع کچہری آئے، عمران خان کی اسلام آباد کچہری آمد کے پیش نظر سیکیورٹی کےسخت اقدامات کئے گئے تھے۔

سیشن جج کامران بشارت مفتی نے عمران خان کی درخواست ضمانت پرسماعت کی ، عمران خان اپنے وکیل بابر اعوان کے ہمراہ عدالت پیش ہوئے۔

دوران سماعت وکلاء کے دلائل سننے کے بعد عدالت نے پانچ پانچ ہزار روپے مالیتی مچلکوں کے عوض تھانہ آبپارہ، آئی نائن،کوہسار، کراچی کمپنی ،گولڑہ،ترنول اور تھانہ سیکریٹریٹ میں درج10مختلف مقدمات میں ضمانت منظور کرتے ہوئے پولیس کو گرفتاری سے روک دیا۔

عدالت نے مقدمات کا ریکارڈ طلب کرتے ہوئے سماعت6 جولائی تک کےلیے ملتوی کردی۔

دوسری جانب ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج عبدالغفور کاکڑ کی عدالت نے تھانہ بہارہ کہو، سہالہ،کورال اور تھانہ لوہی بھیر میں درج5 مختلف مقدمات میں بھی سابق وزیر اعظم عمران خان کی پانچ پانچ ہزار روپے مالیتی مچلکوں کے عوض عبوری ضمانت منظور  کرلی۔

یاد رہے رواں ماہ کے آغاز میں پشاور ہائی کورٹ نے لانگ مارچ کے معاملے اسلام آباد کے تھانوں میں درج مقدمات پر چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان کی ضمانت منظور کی تھی۔

خیال رہے عمران خان پر 25 مئی کےلانگ مارچ پراسلام آباد کے تھانوں میں مقدمات درج ہیں ، مقدمات میں عمران خان کے علاوہ اسد عمر،شیریں مزاری، زرتاج گل ، خرم نواز، شاہ محمودقریشی ،علی امین گنڈا پور کا نام بھی نامزد کیا گیا تھا۔

مقدمات میں راستوں کی بندش، کارسررکار مداخلت ،پولیس اہلکاروں پرحملہ ،املاک کو نقصان پہنچانے کی دفعات شامل کی گئی تھیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں