The news is by your side.

Advertisement

اداکارہ میرا کا نکاح درست اور نکاح نامہ اصل ہے، عدالت

لاہور: فیملی کورٹ نے اداکارہ میرا کے تکذیب نکاح کے دعوے کو جھوٹا قرار دیتے ہوئے مسترد کردیا جبکہ خلع کو بنیاد بنا کر نکاح کو منسوخ کرنے کا حکم دے دیا۔

تفصیلات کے مطابق لاہور کی فیملی عدالت کے جج بابر ندیم نے اداکارہ میرا کے تکذیب نکاح کیس کی سماعت کرتے ہوئے میرا کے تکذیب نکاح کے دعوے کو جھوٹا قرار دے دیا، جج بابر ندیم کا کہنا تھا کہ میرا کا دعویٰ جھوٹ پر مبنی ہے۔

تکذیب نکٓاح کیس کی سماعت کے دوران جج نے ریمارکس دیئے کہ میرا عتیق الرحمان کی بیوی ہے اور دونوں کا نکاح نامہ بھی قانون کے عین مطابق جاری ہوا ہے۔

فیملی کورٹ کے جج بابر ندیم نے کہا کہ میرا اور عتیق الرحمان کے درمیان ڈیفنیس میں واقع گھر تنازعے کی وجہ بنا تھا، جس پر دونوں نے ایک دوسرے کے خلاف فوج داری مقدمات قائم کیے تھے، جو گذشتہ دس برسوں سے عدالتوں میں زیر التواء ہیں۔

تکذیب نکاح کیس کی سماعت کرتے ہوئے جج بابر ندیم کا کہنا تھا کہ عدالت سمھجتی ہے کہ اللہ تعالیٰ کی قائم کردہ حدود کے مطابق موجودہ حالات میں دونوں میاں بیوی زندگی نہیں گزار سکتے، لہذا بہتر ہوگا کہ مدعیہ کو نکاح کے بندھن سے آزاد کردیا جائے۔

عدالت میں جج بابر ندیم نے اداکارہ میرا کے تکذیب نکاح کے دعوے کو خارج کیا ہے وہیں دونوں کے درمیان نکاح کو خلع کی بنیاد پر منسوخ بھی کردیا ہے۔

یاد رہے کہ رواں برس مارچ میں اداکارہ میرا اور عتیق الرحمان کا نکاح پڑھانے والے نکاح خواں نے اپنے بیان میں کہا تھا کہ ادکارہ میرا کا نکاح حقائق پر مبنی ہے۔ میرا اور عتیق الرحمٰن کا نکاح گواہان کی موجودگی میں پڑھایا گیا تھا۔

ان کا کہنا تھا کہ میرا کا نکاح اسلامی شریعت کے مطابق پڑھایا، عدالت میں جمع کروایا گیا نکاح نامہ بھی اصلی ہے۔

یاد رہے کہ عتیق الرحمٰن نامی شخص کی جانب سے میرا کے خاوند ہونے کا دعویٰ کیا گیا تھا جس پر گزشتہ کئی سالوں سے دونوں کے درمیان مختلف عدالتوں میں مقدمات بھی زیر سماعت رہے ہیں۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں