متنازع فیصلے سے بچنے کیلئے تینوں ریفرنسز الگ چلیں گے، تفصیلی فیصلہ جاری
The news is by your side.

Advertisement

متنازع فیصلے سے بچنے کیلئے تینوں ریفرنسز الگ چلیں گے، تفصیلی فیصلہ جاری

اسلام آباد: نوازشریف کی3نیب ریفرنسزکویکجاکرنےکی درخواست مسترد کرنے کا تفصیلی فیصلہ جاری کردیا، تینوں ریفرنسز میں الزامات ایک نوعیت کےنہیں، متنازع فیصلے سے بچنے کیلئے تینوں ریفرنسز الگ چلیں گے۔

تفصیلات کے مطابق احتساب عدالت میں سابق وزیر اعظم نواز شریف کی 3ریفرنسزکو یکجا کرنے کی درخواست کو مسترد کرنے کا تفصیلی فیصلہ جاری کردیاگیا، احتساب عدالت اسلام آباد کے جج محمد بشیر نے فیصلہ جاری کیا جو کہ 9صفحات پر مشتمل ہے ۔

تفصیلی فیصلے میں کہا گیا کہ حکم نامےکےذریعےریفرنسزکویکجاکرنےکی درخواست خارج کی جاتی ہے، فریقین کے وکلا کے دلائل سننے کے بعد درخواست خارج کی۔

فیصلے میں کہا گیا ہے کہ تینوں ریفرنسزمیں عائد کیے گئے الزامات مختلف ہیں، تینوں ریفرنسزمیں صرف 2گواہان مشترک ہیں، درخواست گزارنےاپنی آسانی کیلئےریفرنسزیکجاکرنےکی استدعاکی۔


مزید پڑھیں : نواز شریف کی تینوں ریفرنسز یکجا کرنے کی درخواست مسترد


تفصیلی فیصلے کے مطابق احتساب عدالت میں عبوری ریفرنس دائرہیں، ملزمان سےمتعلق تحقیقات جاری ہیں،حسن اورحسین نوازمفرور ہیں، ایسےمرحلے پر کیسزکو یکجاکرنے سے پیچیدگی ہوسکتی ہے، کیس میں دوسرے ملکوں سے معلومات آنےکاانتظارہے، مزید موادجمع ہونےپرضمنی ریفرنس دائرہونگے۔

فیصلے میں مزید کہا گیا ہے کہ تین ریفرنسزمیں صرف 2گواہ مشترک ہیں، ریفرنسزیکجاکرنےسے حقائق گڑبڑہوجائیں گے، تینوں ریفرنسز میں الزامات ایک نوعیت کےنہیں، ملز م نوازشریف بیان کیلئےنیب میں پیش نہیں ہوئے، جےآئی ٹی میں مبینہ طور پرگول مول جواب دیئےگئے۔

عدالت کا اپنے فیصلے میں کہنا ہے کہ ملزم یااستغاثہ جوائنٹ ٹرائل پراصرارنہیں کرسکتے، درخواست گزارریفرنس یکجاکرنےکیلئےمطمئن نہ کرسکا، متنازع فیصلے سےبچنےکیلئےتینوں ریفرنسز الگ چلیں گے۔

یاد رہے گذشتہ سماعت میں احتساب عدالت نے نواز شریف کی تینوں ریفرنسز یکجا کرنے کی درخواست مسترد کردی تھی اور نواز شریف پر تینوں ریفرنس میں باضابطہ فرد جرم عائد کردی تھی۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں