The news is by your side.

Advertisement

رمضان شوگر ملز ریفرنس ، شہباز شریف اور حمزہ شہباز کو 4 مارچ کے لئے نوٹس جاری

لاہور : احتساب عدالت نے رمضان شوگر ملز ریفرنس میں شہباز شریف اور حمزہ شہباز کو 4 مارچ کے لئے نوٹس جاری کر دیئے، نیب نے گذشتہ روز رمضان شوگر ملز کا باضابطہ ریفرنس دائر کیا تھا۔

تفصیلات کے مطابق احتساب عدالت کے جج نجم الحسن نے رمضان شوگر ملز کیس کی سماعت کی، نیب کی جانب سے رمضان شوگر ملز کا باضابطہ ریفرنس گذشتہ روز عدالت میں دائر کیا گیا، ریفرنس میں شہباز شریف اور حمزہ شہباز کو نامزد کیا گیا ہے۔

ریفرنس میں کہا گیا کہ شہبازشریف نے اپنے خاندان کی مل کو فائدہ پہنچانے کے لئے عوامی مفاد کا نام لیا، شہباز شریف کے اس فیصلے سے سرکاری خزانے کو 213 ملین کا نقصان ہوا، سرکاری خزانے کا نقصان شہباز اور حمزہ شہباز کی ملی بھگت سے ہوا۔ اتنے شواہد موجود ہیں کہ ریفرنس دائر کیا تاکہ کیس چلایا جا سکے۔

ریفرنس میں کہا گیا کہ حمزہ شہباز کے خلاف انکوائری جاری ہے، مکمل ہونے پر ضمنی ریفرنس دائر کیا جائے گا، شہباز شریف اور حمزہ شہباز کے خلاف ٹرائل جلد مکمل کر کے قانون کے مطابق سزاء دی جائے۔

مزید پڑھیں : شہباز شریف اور حمزہ شہباز کے خلاف رمضان شوگرملز ریفرنس دائر

نیب ریفرنس میں مزید کہا گیا کہ رمضان شوگر ملز اس وقت کے وزیراعلی اور ان کے خاندان کی ملکیت ہے، رمضان شوگر ملز کے لیے 9 سے دس کلومیٹر طویل نالہ تعمیر کیا، حکام نے دھوکہ دہی سے اس نالے کی تعمیر کو مقامی آبادیوں کے لئے ضروری قرار دیا۔ تفتیش سے یہ بات ثابت ہوئی کہ نالے کی تعمیر رمضان شوگر ملز کی نکاسی آب کے لئے کی گئی۔

نیب کے مطابق گذشتہ برس چار جولائی کو شہبازشریف اور رمضان شوگر ملز انتطامیہ کے خلاف انکوائری شروع کی گئی، تفتیش سے ثابت ہوا کہ شہباز شریف نے رمضان شوگر ملز کو فائدہ دینے کے لیے اپنے اختیارات کا غلط استعمال کیا۔

جس پر عدالت نے شہباز شریف اور حمزہ شہباز کو چار مارچ کے لئے نوٹس جاری کر دیئے۔

یاد رہے 2 فروری کو لاہور میں ڈی جی نیب شہزاد سلیم کی زیرصدارت ریجنل بورڈ کے اجلاس میں رمضان شوگر ملز کیس کا ریفرنس منظوری کیلئے نیب ہیڈ کوارٹر ارسال کرنے کا حکم جاری کیا گیا تھا، ریفرنس میں شہباز شریف اور ڈائریکٹر رمضان شوگر ملز حمزہ شہباز کو مرکزی ملزم نامزد کیا گیا تھا، ملزمان پر مبینہ طور پر21کروڑ روپے کی کرپشن کی تحقیقات جاری تھیں۔

واضح رہے قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر شہباز شریف کے دونوں بیٹوں حمزہ شہباز اور سلمان شہباز پر سرکاری خزانے کے غیر قانونی استعمال کا الزام ہے۔

خیال رہے سابق وزیراعلیٰ پنجاب اور قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر کے عہدے پر برا جمان شہباز شریف اس وقت مختلف کیسز کا سامنا ہے، لاہور ہائی کورٹ نے آشیانہ اوررمضان شوگرملزکیس میں شہبازشریف کی درخواست ضمانت منظور کرکے 1 ،1 کروڑ روپے مچلکے جمع کرانے اور رہائی کا حکم دیا تھا جبکہ حمزہ شہباز بیٹی کی خراب طبیعت کے باعث لندن میں ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں