The news is by your side.

Advertisement

شہباز شریف کی بیٹی کو اشتہاری قرار دینے کی کارروائی کا آغاز

لاہور : احتساب عدالت نے منی لانڈرنگ ریفرنس میں اپوزیشن لیڈر شہباز شریف کی بیٹی رابعہ عمران کو اشتہاری قرار دینے کی کارروائی کا آغاز کر دیا۔

تفصیلات کے مطابق اپوزیشن لیڈر شہباز شریف فیملی منی لانڈرنگ ریفرنس میں بڑی پیش رفت سامنے آئی ، احتساب عدالت نے شہباز شریف کی بیٹی رابعہ عمران کو اشتہاری قرار دینے کی کارروائی کا آغاز کر دیا۔

احتساب عدالت کے ایڈمن جج جواد الحسن نے حکم جاری کیا کہ رابعہ عمران کی اشتہاری کارروائی کے اشتہارات آویزاں کئے جائیں، عدالتی حکم کے باوجود پیش نہ ہونے پر شہباز شریف کی بیٹی کے خلاف اشتہاری قرار دینے کی کارروائی کا آغاز کیا گیا۔

عدالت نے رابعہ عمران کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری بھی جاری کیے تاہم ان پرعمل درآمد نہ ہوسکا۔

منی لانڈرنگ ریفرنس میں سلمان شہباز کے خلاف پہلے ہی عدالت اشتہاری کی کارروائی کا آغاز کر چکی ہے اور سلمان شہباز کو مفرور قرار دینے کے اشتہارات عدالتی احاطے اور ملزم کی پاکستان و بیرون ملک رہائشگاہوں پر چسپاں کر دیئے گئے تھے۔

عدالتی اشتہار میں کہا گیا تھا کہ ملزم سلمان شہباز ٹرائل کا سامنا کرنے کیلئے جان بوجھ کر روپوش ہے، ضابطہ فوجداری کی دفعہ 87 کے تحت ملزم سلمان شہباز کے اشتہار جاری کئے گئے ہیں، ملزم سلمان شہباز کو 13 اکتوبر کو عدالت میں پیش ہو کر اپنے دفاع کا ایک اور موقع دیا جا رہا ہے۔

خیال رہے نیب ریفرنس کے مطابق شہباز شریف فیملی نے 7 ارب روپے سے زائد کی منی لانڈرنگ کی اور غیر قانونی اثاثے بناٸے، حمزہ شہباز اور سلمان شہباز پر 1 ایک ارب روپے تک کے اثاثے بنانے اور منی لانڈرنگ کرنے کا الزام ہے جبکہ شہباز شریف فیملی نے اپنے ملازمین اور قریبی دوستوں کے ذریعے منی لانڈرنگ کی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں