The news is by your side.

Advertisement

عدالت نے شہباز گل کو امریکا سے وطن واپسی پر گرفتاری سے روک دیا

اسلام آباد ہائیکورٹ نے پاکستان تحریک انصاف کے رہنما شہباز گل کو امریکا سے وطن واپسی پر  گرفتاری سے روک دیا ہے۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق اسلام آباد ہائیکورٹ میں پی ٹی آئی رہنماؤں شہباز گل اور فواد چوہدری کی توہین مذہب مقدمات کے اندراج پر حفاظی ضمانتوں کی درخواستوں پر سماعت ہوئی چیف جسٹس اسلام آباد ہائیکورٹ اطہر من اللہ نے شہباز گل کو امریکا سے وطن واپسی پر گرفتار کرنے سے روک دیا ہے۔

اسلام آباد ہائیکورٹ میں پی ٹی آئی کے وکیل فیصل چوہدری نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ جس دن مسجد نبویؐ والا واقعہ ہوا اس روز شہباز گل امریکا میں تھے لیکن فیصل آباد مسیت دیگر شہروں میں مقدمات درج کیے گئے۔

وکیل فیصل چوہدری نے کہا کہ خطرہ ہے کہ شہباز گل کو امریکا سے وطن واپسی کر گرفتار کرلیا جائیگا اسی لیے شہباز گل کی حفاظتی ضمانت کی درخواست دائر کی ہے ایک ہی واقعے کی  متعدد ایف آئی آر کاٹی گئی ہیں، پاکستانی قوانین کے مطابق ایسا نہیں ہو سکتا ہے۔

وکیل پی ٹی آئی کا مزید کہنا تھا کہ سیاسی اسکور برابر کرنے کیلئے ایسا کیا جارہا ہے، چیف جسٹس ہائیکورٹ کے سرکلر کا ہمیں آج فائدہ ہوا ہے، درخواست میں استدعا کی گئی ہے کہ گرفتاری نہ کی جائے، پی ٹی آئی رہنماؤں کو ہراساں کیا جا رہا ہے اور سیاسی انتقام کا نشانہ بنانے کیلئے ایسی مہم چلائی جا رہی ہے۔

عدالت نے پی ٹی آئی کے وکیل فیصل چوہدری کے دلائل سننے کے بعد حکومت کو شہباز گل کو وطن واپسی پر گرفتار کرنے سے روک دیا ہے۔

واضح رہے کہ پی ٹی آئی رہنماؤں فواد چوہدری اور شہباز گل نے توہین مقدمات اندارج کیخلاف اسلام آباد ہائیکورٹ میں حفاظتی ضمانت کیلیے آج الگ الگ درخواستیں دائر کی ہیں جن کو سماعت کیلیے منظور کرتے ہوئے عدالت کو چھٹی والے روز کھولا گیا۔

درخواست گزاروں نے اسلام آباد ہائیکورٹ میں دائر درخواستوں میں عدالت سے استدعا کی تھی کہ انہیں ہراساں کرنے سے روکا جائے اور ہمارے خلاف ایف آئی آرز کو ریکارڈ پر رکھا جائے۔

درخواست گزاروں کا کہنا تھا کہ صرف انہیں ہی نہیں بلکہ ان کے گھر والوں کو بھی ہراساں کیا جارہا ہے، فوجداری مقدمات کے اندراج کی وجوہات عدالت معلوم کرے اور حکومت درخوست گزاروں کےخلاف کاررروائی سے پہلےعدالت کو مطمئن کرے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں