The news is by your side.

Advertisement

کرونا کی نئی لہر: مزید 72 افراد لقمہ اجل بن گئے

اسلام آباد: ملک میں کرونا وبا کی تیسری لہر کے خوفناک اثرات نظر آنا شروع ہوگئے ہیں، مزید 72 افراد کو اس وبا کے باعث لقمہ اجل بن گئے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق ملک بھر میں کرونا وائرس کے بڑھتے ہوئے کیسز اور ہلاکتوں سے متعلق نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر نے تازہ ترین اعداد و شمار جاری کئے ہیں، این سی او سی کے مطابق 24 گھنٹے میں ملک بھر میں 3 ہزار 270 نئے کیسز رپورٹ ہوئے۔

این سی او سی کے مطابق ملک میں گذشتہ چوبیس گھنٹےمیں کرونا کےمزید72مریض انتقال کرگئے، جس کے باعث پاکستان میں کرونا کے باعث جاں بحق مریضوں کی تعداد 13ہزار935ہوگئی ہے۔

نیشنل کمانڈ اینڈ کنٹرول سینٹر کے مطابق 24 گھنٹے میں 39 ہزار 742 کرونا ٹیسٹ کیے گئے جس میں سے 3270 کیسز مثبت رپورٹ ہوئے، گذشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران ملک میں کرونا ٹیسٹ مثبت آنے کی شرح 8.22 فیصد رہی۔

گذشتہ روزنیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر (این سی او سی) نے ملک بھر میں کرونا وائرس کی تیسری لہر کے پیش نظر پابندیاں مزید سخت کرنے کا فیصلہ کیا تھا۔

نیشنل کمانڈ آپریشن سینٹر نے پابندیاں مزید سخت کرنے کی ہدایات جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ عالمی وبا کا پھیلاؤ روکنا ہوگا، اس سلسلے میں تمام اضلاع میں ایس او پیز پر عملدرآمد سخت کرایا جائے گا۔ ایمرجنسی کے سوائے نقل وحرکت کی اجازت نہیں ہوگی، ہفتے میں 2 روز کیلئے کاروبار مکمل بند رہیں گے۔

یہ بھی پڑھیں:  اسلام آباد میں کورونا پھر بڑھنے لگا،کیسز کی تعداد 51 ہزار 400 سے تجاوز کرگئی

اس کے علاوہ 300 افراد کے اجتماع کی اجازت ایس او پیز پر عملدرآمد سے مشروط کرتے ہوئے فیصلہ کیا گیا، اسپورٹس سرگرمیاں بھی بند رہیں گی،تفریحی پارکس بند رہیں گے۔ تاہم واکنگ اور جاگنگ ٹریکس پر جانے کی اجازت ہوگی۔

تمام دفاتر میں آدھے عملہ کو آنے کی اجازت ہو گی، ٹرانسپورٹ 50 فیصد مسافروں کے ساتھ چلے گی، اس کے علاوہ ریلوے ٹرنیں بھی 70 فیصد مسافروں کے ساتھ چل سکیں گی،تمام لوگوں کیلئے ماسک پہننا لازمی ہوگا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں