The news is by your side.

Advertisement

سابق امریکی صدر کے حامیوں نے کرونا ویکسین کو آبادی کم کرنے کی سازش قرار دے دیا

واشنگٹن: سابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے حامیوں نے کرونا ویکسین کو آبادی کم کرنے کی سازش قرار دے دیا۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق ٹرمپ کے حامیوں نے کرونا ویکسین کو آبادی کم کرنے کی سازش قرار دیتے ہوئے ملک کے سب سے بڑے کرونا ویکسی نیشن سینٹر کو بند کرا دیا۔

حامیوں کا کہنا ہے کہ کرونا ویکسین آبادی کم کرنے کی سازش ہے، جو اشرافیہ نے رچائی ہے۔

رپورٹس کے مطابق لاس اینجلس کے ڈوجر اسٹیڈیم میں قائم کرونا ویکسین کے ایک مرکز کو مظاہرین کی جانب سے احتجاج پر بند کر دیا گیا ہے۔

مظاہرین نے کرونا سینٹر پر جمع ہو کر ویکسی نیشن کو سازش قرار دیتے ہوئے شدید نعرے بازی کی، مظاہرین میں زیادہ تعداد ٹرمپ کے حامیوں کی تھی جنھوں نے پلے کارڈز اٹھا رکھے تھے۔

امریکی میڈیا کا کہنا ہے کہ پلے کارڈز پر لکھا گیا تھا کہ کرونا ویکسی نیشن آبادی پر قابو پانے کی ملکی اشرافیہ کی ایک سازش ہے۔

مظاہرین نے ویکسی نیشن کو بند کرنے کا مطالبہ بھی کیا، مظاہرے میں شامل ایک شخص نے میڈیا سے گفتگو میں کہا کہ یہ کوئی ویکسین نہیں ہے، یہ سینٹر ذبح خانہ یا ایک تجربہ گاہ ہے جہاں ہم سب کو چوہا بنایا گیا ہے جن پر سائنسی ریسرچ کی جائے گی۔

سوشل میڈیا پر بھی ٹرمپ کے حامیوں نے مظاہرے کی حمایت کی، ان پوسٹوں میں صارفین نے بل گیٹس سے ویکسین لگوانے کا مطالبہ بھی کیا اور ویکسی نیشن کے ذریعے انسانی جسم میں چپ داخل کرنے جیسے سازشی نظریات کو فروغ دیا۔

مقامی حکام کا کہنا تھا کہ مذکورہ کرونا سینٹر کو ایک گھنٹے کے لیے بند کیا گیا تھا، تاہم پولیس کی جانب سے مظاہرین کو منتشر کرنے کے بعد اسے پھر کھولا گیا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں