The news is by your side.

Advertisement

ایران میں مقامی تیار کردہ ویکسین کو استعمال کی اجازت مل گئی

تہران: ایرانی محکمہ صحت نے مقامی طور پر تیار کردہ کرونا ویکسین کے ہنگامی استعمال کی اجازت دے دی۔

تفصیلات کے مطابق ایرانی وزیر صحت سعید نمکی نے میڈیا کو بتایا ہے کہ کرونا وائرس کے خلاف مقامی طور پر تیار کر دہ ویکسین ’کوو ایران برکت‘ (COVIran) کے ملک میں ہنگامی استعمال کی اجازت دے دی گئی ہے۔

وزیر صحت کا کہنا تھا کہ دیگر مقامی ویکسینز پاستور اور راضی پارس سمیت فخرہ نامی ویکسینز کو بھی جلد ہی استعمال کا اجازت نامہ مل جائے گا۔

واضح رہے کہ ایران نے کوو ایران نامی ویکسین کا پہلی بار انسان پر ٹیسٹ 29 دسمبر کو کیا تھا، جس کے مثبت نتائے سامنے آئے تھے، اس ویکسین کی پہلی خوراک سائنسی ادارے کے سربراہ محمد مخبر کی بیٹی طیبہ مخبر کو رضا کارانہ طور پر لگائی گئی تھی۔

کوو ایران پہلی کرونا ویکسین ہے جسے ایرانی محققین نے تیار کیا ہے، اس کی بڑے پیمانے پر تیاری کا آغاز 29 مارچ کو ہوا تھا، جب کہ 22 جون سے اس ویکسین کی نئی کھیپ کی تیاری کا آغاز ہوگا، اور ماہانہ ایک کروڑ دس لاکھ ڈوز تیار کی جائیں گی۔

ویکسین کی کلینکل اسٹڈیز کے ڈائریکٹر سید رضا مظہری کا کہنا ہے کہ 22 مئی سے ویکسین کی جس کھیپ کی پروڈکشن شروع کی گئی تھی اس میں اب تک 30 لاکھ ڈوز تیار کی جا چکی ہیں۔

تہران اور کرج میں ساڑھے دس ہزار رضاکاروں کو اس ویکسین کی پہلی ڈوز دی جا چکی ہے، اور اگلے ہفتے بوشہر، مشہد، شیراز اور اصفہان میں بھی ساڑھے نو ہزار رضاکاروں کو اس کی پہلی ڈوز دی جائے گی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں