The news is by your side.

Advertisement

وزیر ٹرانسپورٹ کا بیرون شہر زائد کرایہ وصول کرنے والوں کے خلاف ایکشن

کراچی: پیلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے اے آر وائی نیوز پر شہر سے باہر جانے والے مسافروں سے زائد کرایہ وصول کرنے کی خبر کا نوٹس لیتے ہوئے وزیر ٹرانسپورٹ ناصر حسین شاہ کو ٹرانسپوٹرز کے خلاف کارروائی کے احکامات جاری کر دئیے۔

تفصیلات کے مطابق کراچی سے اندرون سندھ اور ملک کے مختلف علاقوں میں جانے والے پردیسیوں سے ٹرانسپورٹرز کی جانب سے من مانے کرایوں میں اضافے کے حوالے سے اے آر وائی نیوز پر خبر نشر کی گئی تھی۔جس کے بعد پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے وزیر ٹرانسپورٹ ناصر حسین شاہ کو عوام سے زائد کرایہ وصول کرنے والوں کے خلاف کارروائی کے احکامات صادر فرمائے۔

چیئرمین کی ہدایت پر ناصر حسین شاہ محکمہ ٹرانسپورٹ اور پولیس نفری کے ہمراہ صدر بس اسٹاپ پہنچے اور ٹرانسپورٹرز سے زائد کرایہ وصول کی وجوہات طلب کیں۔ صوبائی وزیر نے ٹرانسپورٹرز کو پابند کیا کہ وہ عوام کے ساتھ کی جانے والی زیادتی بند کریں ورنہ اُن کے خلاف محکمہ جاتی کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔ جس کے بعد ٹرانسپورٹرز نے محکمے کے عملے کے ساتھ تلخ کلامی کی اور شدید احتجاج کیا۔

ٹرانسپورٹرز کی جانب سے محمکے کے عملے کے ساتھ بدتمیزی اور بگڑتی صورتحال کو دیکھتے ہوئے ناصر حسین شاہ نے ایس ایچ او پریڈی کو نفری سمیت طلب کیا اور زائد کرایہ وصول کرنے والوں کے خلاف کریک ڈاؤن کے احکامات بھی جاری کیے۔ گاڑیوں کے مالکان نے صوبائی وزیر کو کریک ڈاؤن کے خلاف احتجاجاً گاڑیاں بند کرنے کی دھمکی بھی دی۔بعد ازاں ناصر حسین شاہ نے دھمکیاں دینے والے ٹرانسپوٹرز کو گاڑیاں بند رکھنے کا مشورہ دیا۔

اس موقع پر صوبائی وزیر ٹرانسپورٹ کا کہنا تھا کہ ’’چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کی خاص ہدایت پر یہاں پہنچا ہوں کیونکہ پارٹی چیئرمین نے خاص طور پر عوام کے مسائل حل کرنے کے احکامات جاری کیے ہیں‘‘۔

اُن کا مزید کہنا تھا کہ ’’عوام کے ساتھ زیادتی کرنے اور زائد کرایہ وصول کرنے والوں کو کسی صورت معاف نہیں کیا جائے گا، اگر ٹرانسپورٹرز اپنا کام بند کرنا چاہتے ہیں تو کرلیں مگر عوام کے ساتھ زیادتی کا سلسلہ ہر صورت خاتمہ کیا جائے گا‘‘۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں